The news is by your side.

Advertisement

بجٹ 17-2016: زرعی اور صنعتی شعبہ کے لیے خصوصی پیکج کا امکان

اسلام آباد: رواں مالی سال میں زراعت کے شعبہ کی شرح نمو منفی رہی۔ آئندہ بجٹ میں زرعی اور صنعتی سیکٹر کے لیے خصوصی پیکج دیے جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق زراعت کے شعبہ کا خصوصی پیکیج پیداواری لاگت میں کمی کے لیے دیا جائے گا۔ صنعتی شعبہ بھی اس پیکج سے مستفید ہو سکے گا۔ دونوں شعبوں کی کارکردگی ملکی معاشی شرح نمو اور برآمدت میں اضافے کے لیے انتہائی اہم ہیں۔

گندم اور کپاس کی پیداوار میں کمی کا امکان *

آئندہ مالی سال کے لیے شرح نمو کے ہدف میں کمی کا امکان *

معاشی ترقی کا ہدف رواں برس بھی حاصل نہ ہوسکا *

ذرائع کے مطابق زراعت کے لیے دیے جانے والے پیکیج کا حجم 200 ارب روپے تک ہو سکتا ہے۔ وزیر اعظم نے بھی کسانوں کی معاونت کے لیے کھاد کی قیمتوں میں کمی کی خاص ہدایات جاری کی ہیں۔

رواں مالی سال زراعت کے شعبہ کی شرح نمو منفی 0.19 فیصد رہی جو کہ 15 سال کی کم ترین سطح ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں