The news is by your side.

Advertisement

نقیب اللہ محسود کا دوست ڈی آئی خان میں قتل

ڈی آئی خان : ڈیرہ اسماعیل خان میں نقیب اللہ محسود کے قریبی دوست آفتاب محسود کی گولیوں سے چھلنی لاش برآمد ہوئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نقیب اللہ محسود کے ماورائے عدالت قتل کے خلاف وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ہونے والے دھرنے میں متحرک نوجوان آفتاب محسود کی گولیوں سے چھلنی لاش ڈئی آئی خان میں ایک زیرِ تعمیر گھر سے برآمد ہوئی۔

پولیس کے مطابق آفتاب محسود کو4 گولیاں ماری گئی ہیں جن میں 3 سینے جبکہ ایک گولی بازو میں لگی ہے۔

آفتاب محسود ڈیرہ اسماعیل خان کی گومل یونیورسٹی کا طالب علم تھا اور وفاق کے زیرانتظام قبائلی علاقے فاٹا کی ایجنسی جنوبی وزیرستان کے علاقے مکین کا رہائشی تھا۔

ڈیرہ اسماعیل خان کی پولیس نے نامعلوم افراد کے خلاف آفتاب محسود کے قتل کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز نقیب اللہ کیس میں نامزد ملزمان کو مدد فراہم کرنے والے سہولت کار کو گرفتار کرلیا گیا تھا، سابق پولیس اہلکار نے ملزمان کو فرار کرانے میں مدد فراہم کی تھی۔

یاد رہے کہ سابق ایس ایس پی ملیر راؤ انوار نے نوجوان نقیب اللہ محسود کو لطیف ٹاؤن میں مقابلے میں ہلاک کرنے کا دعوی کیا تھا اور اس کا تعلق تحریک طالبان سے بتایا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں