The news is by your side.

Advertisement

اسرائیل کا برمی افواج کو ہتھیاروں کی سپلائی جاری رکھنے کا اعلان

رنگون: برمی افواج کی جانب سے جاری روہنگیا مسلمانوں کے قتلِ عام کے باوجود اسرائیل نے میانمار کو ہتھیاروں کی فروخت جاری رکھنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیل کی جانب سے ہتھیاروں کی مسلسل فراہمی کا اعلان اس وقت سامنے آیا ہے جب لاکھوں روہنگیا مسلمان فوجی مظالم کے سبب ہجرت کررہے ہیں اوراقوامِ متحدہ اور امریکا سمیت دنیا کے کئی ممالک فوجی کارروائی روک دینے کا مطالبہ کررہے ہیں۔

انسانی حقوق کی تنظیموں کے مطابق میانمار کی حکومت کو اسرائیلی کمپنیوں نے سو سے زائد ٹینک ‘ جنگی کشتیاں اور ہلکے ہتھیار فروخت کیے ہیں۔ اسرائیل ہی کی ایک کمپنی ٹی اے آر آئیڈیل کانسیپٹ نے برما کی خصوصی فورسز کو راخنے میں خصوصی تربیت بھی دی ہے‘ یاد رہے کہ راخنے فسادات سے سب سے زیادہ متاثرہ علاقہ ہے۔

روہنگیا بستیاں جلانے اورفورسزکےتشدد پرتشویش ہے‘ امریکہ*

 یاد رہے کہ گزشتہ ماہ اگست کی 25 تاریخ سے شروع ہونے والے حالیہ فسادات میں اب تک 400 کے لگ بھگ روہنگیا مسلمان اپنی جان سے ہاتھ دھو چکے ہیں جبکہ ڈیڑھ لاکھ کے قریب بنگلہ دیش ہجرت کرگئے ہیں۔

دوسری جانب میانمار کی حکومت نے روہنگیا مسلمانوں پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ مسلح حملوں میں ملوث ہیں اور سیکیورٹی فورسز ان کے خلاف کارروائی کر رہی ہیں۔ انہوں نے یہ بھی الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے اپنے گھروں کو خود آگ لگائی ہے اور وہی سویلین ہلاکتوں کے ذمہ دار ہیں۔

امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیدرنوئیرٹ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے برما میں روہنگیا مسلمانوں کی صورت حال پرتشویش کا اظہارکیا تھا۔

انہوں نے برما میں سیکورٹی فورسز پر روہنگیا دیہات کو نذر آتش کرنے اور تشدد کے واقعات سمیت انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے سنگین الزامات عائد کیے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں