تازہ ترین

مجھے 10 سال تک جیل میں رکھنے کے لیے غداری کے قانون کا استعمال کیا جائے گا: عمران خان

اسلام آباد: چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا ہے کہ بشریٰ بیگم کو جیل میں ڈال کر میری تذلیل کرنے کا لندن منصوبہ سامنے آ گیا ہے، اور مجھے 10 سال تک جیل میں رکھنے کے لیے غداری کے قانون کا استعمال کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے ٹوئٹ میں انکشاف کیا ہے کہ ’’اب لندن کا مکمل منصوبہ سامنے آ گیا ہے، اور منصوبہ یہ ہے کہ بشریٰ بیگم کو جیل میں ڈال کر میری تذلیل کی جائے۔‘‘

انھوں نے لندن پلان کے حوالے سے مزید کہا ’’مجھے 10 سال تک جیل میں رکھنے کے لیے غداری کے قانون کا استعمال کیا جائے گا، اس کے بعد پی ٹی آئی کی قیادت، کارکنوں کے خلاف مکمل کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔‘‘

عمران خان نے کہا کہ جان بوجھ کر نہ صرف پی ٹی آئی کے کارکنوں بلکہ عام شہریوں پر بھی تشدد کیا جا رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ انٹرنیٹ آج پھر معطل کر دیا جائے گا، یہ جزوی طور پر کھلے سوشل میڈیا پر پابندی لگا دیں گے، سپریم کورٹ کے باہر جے یو آئی ایف کا ڈراما صرف ایک مقصد کے لیے کیا جا رہا ہے، اس کا مقصد ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان آئین کے مطابق فیصلہ نہ دیں۔

عمران خان نے کہا ’’عوام کے لیے میرا پیغام ہے کہ اپنے خون کے آخری قطرے تک حقیقی آزادی کے لیے لڑتا رہوں گا۔‘‘

پی ٹی آئی چیئرمین کا کہنا تھا کہ چادر اور چار دیواری کے تقدس کو کبھی بھی اس طرح پامال نہیں کیا گیا، یہ لوگوں میں خوف پیدا کرنے کی کوشش ہے، میرے لیے موت ان بدمعاشوں کا غلام بننے سے بہتر ہے، ہم خوف کے بت کے آگے اگر جھکے تو آنے والی نسلوں کے لیے صرف ذلت اور بے عزتی ہوگی۔

انھوں نے مزید کہا کہ پاکستان پہلے ہی سپریم کورٹ پر اس طرح کا وحشیانہ حملہ دیکھ چکا ہے، 1997 میں ن لیگ کے غنڈوں نے سپریم کورٹ پر حملہ کیا تھا۔

Comments