The news is by your side.

Advertisement

کیک کے شوقین افراد ہوشیار : منشیات فروشوں نے نیا طریقہ ڈھونڈ لیا

اگر آپ کیک کھاتے ہیں اور کیک کے عادی ہیں تو آپ کے لیے بری خبر ہے کیونکہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے یہ سنسنی خیز انکشاف کیا ہے کہ منشیات فروش اب منشیات فروخت کرنے کی نئے نئے طریقوں کا استعمال کر رہے ہیں۔

ان میں یہ کیک بھی شامل ہے۔ ممبئی اینٹی نارکوٹکس سیل نے ممبئی کے مجگاؤں علاقے سے ہشیش کی آمیزش والے اس کیک کا کاروبار کرنے والے تین ملزمین کو گرفتار کیا ہے۔

این سی بی کی کارروائی میں براؤنی کیک میں ہشیش کی آمیزش والے اس گورکھ دھندے کو بے نقاب کرتے ہوئے ایک غیر ملکی سمیت تین لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ اس گرفتاری میں ایک ڈاکٹر بھی شامل ہے۔

ملزم ڈاکٹر رحمین چارنیا ہے، جو ممبئی کے پرنس علی خان اسپتال بطور سائکیٹرسٹ پریکٹس کرتا ہے۔ اینٹی نارکوٹکس سیل نے جب اس سے منسلک افراد کے گھروں پر چھاپے مارے تو اس دوران 10 کلوگرام ہشیش براؤنی کیک کے ساتھ ساتھ دوسری نشہ آور اشیا اور نقدی بھی برآمد ہوئی۔

تفتیش کے دوران یہ سنسنی خیز انکشاف ہوا ہے کہ ممبئی کے مسلم اکثریتی علاقوں سمیت ہائی پروفائل ہستیوں کو سپلائی کیا جارہا تھا۔ نارکوٹکس کنٹرول بیورو کی مانیں تو اس معاملے میں اور بھی کئی گرفتاریاں ممکن ہیں۔

نارکوٹکس کنٹرول بیورو او اینٹی نارکوٹک سیل کو لگاتار ہونے والی کارروائیوں سے منشیات فروشوں میں سنسنی پھیلی ہوئی ہے۔ منشیات فروش اس گورکھ دھندے کو انجام دینے کے لئے ہر دن نئے طریقے نکالتے ہیں۔

ان حالات میں تفتیشی ایجنسیوں کے لئے یہ کسی چیلنج سے کم نہیں کیونکہ موجودہ وقت میں اس کاروبار سے منسلک افراد کا تعلق کسی بھی طبقے سے ہو سکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں