site
stats
عالمی خبریں

حملہ آور خاتون تاشفین ملک کو پاکستان سے ویزا جاری ہوا، مارک ٹونر

واشنگٹن : امریکا نے کیلیفورنیا فائرنگ کی تحقیقات کے لئے پاکستان سے مدد لینے کا فیصلہ کیا ہے، امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے حملہ آورخاتون تاشفین ملک کوپاکستان سے ویزا جاری کیا گیا۔

واشنگٹن میں میڈیا بریفنگ میں امریکی محکمہ خارجہ کے نائب ترجمان مارک ٹونرکا کہنا تھا کہ کیلی فورنیا واقعہ میں ملوث خاتون تاشفین ملک کو دو ہزار بارہ میں ویزا جاری کیا گیا، تاشفین پاکستانی شہری تھیں جبکہ دوسرا حملہ آور تاشفین کا شوہر رضوان فاروق امریکی شہری تھا، تاشفین کو کے ون ویزا کس شہر میں جاری کیا گیا ابھی نہیں بتاسکتے.

نائب ترجمان کے مطابق حملہ آوروں کے سفرسے متعلق پاکستان اورسعودی عرب سے بھی مدد لی جائے گی۔ایشیا میں ویزا جاری کرتے وقت مکمل جانچ پڑتال کی جاتی ہے، کیلیفورنیا واقعے کی تحقیقات ایف بی آئی کی سربراہی میں جاری ہے.

یاد رہے کہ امریکی شہری سید رضوان فاروق اور اس کی پاکستانی نژاد بیوی تاشفین ملک برنارڈینو میں معذور افراد کے سینٹر پر حملہ کر کے چودہ افراد کو قتل اور سترہ سے زائد کو زخمی کرکے عمارت میں دھماکہ خیز مواد چھوڑ کر فرار ہوئے تاہم پولیس سے فائرنگ کے تبادلے میں دونوں ہلاک ہوگئے۔

ابتدائی تفتیش کے مطابق حملہ سے پہلے دونوں نے اپنے چھ ماہ کے بچے کو اس کی دادی کے پاس یہ کہہ کر چھوڑا کہ وہ ڈاکٹر کے پاس جا رہے ہیں۔ فاروق کے برادر نسبتی فرحان خان کہتے ہیں کہ وہ سوچ بھی نہیں سکتے کہ فاروق اور تاشفین ایسا کچھ کریں گے۔

پولیس کے مطابق انہیں شبہ ہے کہ فاروق عالمی دہشت گرد تنظیموں سے رابطے میں تھا، جب کے اس کے گھر تلاشی میں مزید اسلحہ بھی برآمد کیا گیا، واقعہ کے بعد امریکا بھر میں ایک بار پھر مسلمانوں کے خلاف نفرت پر مبنی بیانات کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top