کینیڈا میں نسل پرست شخص کا مسلمان خاندان حملہ، قتل کی دھمکیاں canadian-racist-man
The news is by your side.

Advertisement

کینیڈا میں نسل پرست شخص کا مسلمان خاندان پر حملہ، قتل کی دھمکیاں

اوٹاوا : کینیڈا کے شہر ٹورنٹو میں نسل پرست شخص کی مسلمان فیملی پر تشدد اور قتل کی دھمکیاں دینے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی، پولیس نے واقعے کی تحقیقات کا آغاز کردیا۔

تفصیلات کے مطابق کینیڈا کے شہر ٹورنٹو میں پولیس نے نسل پرست متعصب شخص کو مسلمان فیملی پر تشدد کرنے، زبانی طور پر ہراساں کرنے اور قتل کی دھمکیاں دینے کے جرم میں گرفتار کرکے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ 50 سالہ کینیڈین شخص شہر کے وسط میں واقع تفریحی مقام پر مسلم خاندان کو مسلسل نسل پرستی اور تعصب کا نشانہ بنارہا ہے۔

کینیڈین پولیس کی جانب سے جمعے کے روز جاری بیان کہا تھا کہ تفتیش کاروں نے مذکورہ شخص کے اقدام کو تعصب اور نفرت پر مبنی جرم قرار دیا ہے اور ملزم کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا اعلان کیا ہے۔

کینیڈین میڈیا کا کہنا ہے کہ ٹورنٹو کی عدالت نے 50 لامبرے بال کے خلاف دو مقدمات تشدد کرنے اور ایک مسلم خاندان کو سر عام قتل کی دھمکیاں دینے کا مقدمہ درج کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پولیس نے ابتدائی تحقیقات مکمل کرلی ہیں لیکن ابھی تک ملزم گرفتار نہیں کیا ہے، تاہم پولیس نے واضح کیا ہے کہ حملہ اسلام دشمنی اور نفرت کی وجہ سے کیا گیا ہے۔

کینیڈین خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ حسن احمد پہلی بار اپنے اہلیہ اور دو بچوں کے ہمراہ ٹورنٹو شہر کا دورہ کرنے گئے تھے جو کینیڈا کے شہر سسکاٹون میں مقیم ہیں۔

حسن احمد نے میڈیا کو بتایا کہ ’مذکورہ ملزم نے مجھے اور دیگر افراد کو دھکے دیئے اور میرے خاندان والوں سے کہا کہ صوبے نے نکل جاؤ‘۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں