The news is by your side.

Advertisement

کیپٹن (ر) صفدر کیس، سندھ حکومت کا دہرا معیار سامنے آگیا

کراچی: مزار قائد کے تقدس کی پامالی کیس میں کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کے موقع پر سندھ حکومت کا دہرا معیار سامنے آگیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق مزار قائد کے تقدس پامالی کیس میں ضمانت پر رہا ہونے والے کیپٹن (ر) صفدر کے کیس میں سندھ حکومت عدالت میں ان کی مخالفت کرتی دکھائی دی جبکہ عدالت سے باہر کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کی مذمت کی جاتی رہی۔

ذرائع کے مطابق سندھ حکومت کے پراسیکیوٹر نے کیپٹن (ر) صفدر کی ضمانت کی مخالفت کی، اسسٹنٹ اٹارنی جنرل کی جانب سے بھی ضمانت کی مخالفت کی گئی۔

بیرونی ایجنٹوں پر کام کرنے والوں کا راستہ روکیں گے، کیپٹن (ر) صفدر

علاوہ ازیں ضمانت پر رہا ہونے والے کیپٹن (ر) صفدر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بیرونی ایجنٹوں پر کام کرنے والوں کا راستہ روکیں گے۔

کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ مجھ پر الزام لگا کہ مادر ملت زندہ باد کے نعرے کیوں لگائے، مادر ملت کی بجائے کیا ایوب اور مشرف زندہ باد کے نعرے لگاتے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت اور وکلا برادری کا شکریہ ادا کرتا ہوں، ہم نے قانون اور آئین کے آگے سرتسلیم خم کیا اور گرفتاری دی، نواز شریف کا پیغام آئین اور جمہوریت کے دفاع کے لیے ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں