The news is by your side.

Advertisement

سخت سوالات اورپریشر ڈال کر وعدہ معاف گواہ بنانے کی کوشش کی گئی ،کیپٹن (ر)صفدر

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنما اور نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا ہے کہ سخت سوالات اورپریشر ڈال کر وعدہ معاف گواہ بنانےکی کوشش کی گئی، ابھی میاں صاحب کو مریم نوازکی زیادہ ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق نواز شریف کے داماد اور رہنما ن لیگ کیپٹن (ر) صفدر نے کمرہ عدالت میں صحافیوں سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی میں پیشی پر انہوں نےپوچھا پاناما کیا ہے، میں نے جواب دیا پاناما
58 ٹو بی ہے ، سخت سوالات اورپریشر ڈال کروعدہ معاف گواہ بنانے کی کوشش کی گئی۔

صحافی نے سوال کیا کہ آپ آج عدالت میں تنہا ہیں،کوئی ساتھ دینے ساتھ کھڑا نہیں ہوا؟ کیپٹن صفدر کا کا کہنا تھا کہ میری خواہش تھی بیان قلمبند کراؤں تو خاندان کی کوئی شخصیت ساتھ نہ ہو۔

گفتگو کے دوران صحافی نے پھر سوال کیا کہ مریم نواز بھی آپ کے ساتھ عدالت میں موجود نہیں؟ جس پر کیپٹن (ر) صفدر نے جواب دیا کہ مریم نواز میرے ساتھ 25سال سے ہیں، ابھی میاں صاحب کو مریم نوازکی زیادہ ضرورت ہے۔

خیال رہے کہ احتساب عدالت میں ایوان فیلڈ ریفرنس کی سماعت جاری ہے اور کیپٹن(ر)صفدر کا بیان ریکارڈ کیاجا رہا ہے۔

بیان سے پہلے مریم نواز نے اپنے میاں کیپٹن صفدر کو پاس بلایا اوربیان کی کاپی کا معائنہ کیا، کیپٹن صفدر کے بیان شروع کرنے کے بعد نواز شریف اور مریم نواز کو جانے کی اجازت مل گئی، جس پر نواز شریف داماد کو عدالت میں اکیلا چھوڑ کر بیٹی کے ہمراہ روانہ ہوگئے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں