The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب ماحول دوست پیٹرول تیار کرے گا

ریاض: سعودی عرب ماحول دوست کاربن فری پیٹرول تیار کرنے جارہا ہے، سعودی عرب جی 20 ممالک میں بھی ری سائیکل اکانومی اپنانے کی کوشش کر رہا ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں کنگ عبد اللہ پیٹرولیم ریسرچ اینڈ اسٹڈی سینٹر نے اپنے تحقیقی مقالے میں کہا ہے کہ سعودی عرب کاربن فری پیٹرول تیار کرنے کی پوزیشن میں ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب جی 20 میں ری سائیکل اکانومی اپنانے کی کوشش کر رہا ہے۔

کنگ عبد اللہ پیٹرولیم ریسرچ اینڈ اسٹڈی سینٹر میں 15 سے زیادہ ممالک کے عالمی ماہرین تحقیق میں حصہ لے رہے ہیں، یہ سینٹر توانائی معیشت پر آزادانہ ریسرچ کروا رہا ہے۔

تحقیقی مقالے کے مطابق سعودی عرب گرین شرح نمو کا ہدف حاصل کرنے کے لیے 9 پالیسیاں اپنائے ہوئے ہے۔

سعودی وژن 2030 میں نئے شہروں کے لیے گرین شرح نمو، قومی صنعت کے فروغ، لاجسٹک خدمات اور ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کا معیار بلند کرنے کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے۔

کنگ عبد اللہ پیٹرولیم ریسرچ اینڈ اسٹڈی سینٹر کا کہنا ہے کہ پوری دنیا میں سب سے کم کاربن والا پیٹرول سعودی عرب تیار کر رہا ہے، اس بنیاد پر وہ مستقبل میں کاربن فری پیٹرول تیار کرنے اور کاربن کی ثانوی مصنوعات کی ری سائیکلنگ کی پوزیشن میں ہوگا۔

تحقیقی مقالے میں بتایا گیا ہے کہ سعودی عرب معمولی کاربن والے پیٹروکیمیکل مواد اور اعلیٰ درجے کا کیمیکل مواد برآمد کرنے والا سب سے بڑا ملک بن جائے گا۔

اسٹڈی سینٹر کے اسکالرز کا کہنا ہے کہ گرین معیشت کی طرف سعودی عرب کی منتقلی کا تجربہ دیگر ممالک سے مختلف ہوگا، اس کا بڑا سبب یہ ہے کہ تیل اور گیس نکالنے کی لاگت سعودی عرب میں دیگر ملکوں کے مقابلے میں کم ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں