The news is by your side.

Advertisement

کراچی : پولیس کی مبینہ فائرنگ سے شہری کی ہلاکت کا مقدمہ درج

کراچی : کورنگی مہران ٹاوٴن میں پولیس کی مبینہ فائرنگ سے شہری کی ہلاکت کا مقدمہ درج کرلیا گیا، مقدمے میں قتل اور ڈکیتی کی دفعات شامل کی گئی ہیں، مقتول کے بھائی نے اعلی حکام سے انصاف کی اپیل کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے کورنگی میں مہران ٹاون پولیس کی مبینہ فائرنگ سے شہری کی ہلاکت کا مقدمہ درج کرلیاگیا، مقدمہ مقتول کے بھائی ثنااللہ کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے، مقدمے میں قتل اور ڈکیتی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

جاں بحق عطااللہ کے بھائی ثنااللہ نے تھانے میں مقدمے کیلئے درخواست جمع کرائی تھی، جس میں کہا کہ شام 6بجے کورنگی ندی کے بند پرواقعہ پیش آیا، ہم 5افراد کام کے بعد گھر جارہےتھے، ڈکیتی کی واردات ہوئی، جس پر ون فائیو کو فون کیا، ڈاکو ہم سے ایک لاکھ روپے ،4موبائل چھین کر لے گئے۔

مدعی ثنااللہ نے بتایا کہ ون فائیو پر کال سے تقریباً 15منٹ پہلے ڈاکو فرار ہوچکے تھے، 3موٹر سائیکل پرپولیس اہلکار پہنچے اور ہم پرفائرنگ کردی، فائرنگ سے میرا بھائی عطااللہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا جبکہ میرا بھانجا اور کاریگر بھی زخمی ہوئے۔

ثنااللہ کا کہنا تھا کہ درخواست ہے پولیس اور ڈاکووں کیخلاف کارروائی کی جائے۔

دوسری جانب پولیس حکام نے چھ اہلکاروں کو حراست میں لیکر ہتھیار فارنزک کیلئے جمع کرلئے ہیں، پولیس حکام کے مطابق چاراہلکاروں کا کہنا ہے انہوں نے فائرنگ نہیں کی ، جائے وقوعہ سے تین خول ملے ہیں ، خولوں کی فارنزک رپورٹ سے اسلحہ کا معلوم ہوسکے گا۔

واقعے کی شفاف تحقیقات کیلئے ایس پی لانڈھی کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں