کوئٹہ میں ایس پی قائد آباد مبارک شاہ کے قتل کا مقدمہ درج -
The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ میں ایس پی قائد آباد مبارک شاہ کے قتل کا مقدمہ درج

کوئٹہ: کلی دیبہ میں ایس پی قائد آباد کے قتل کا مقدمہ بروری تھانے میں درج کر لیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے نواحی علاقے کلی دیبہ میں ایس پی قائد آباد مبارک شاہ کے قتل کا مقدمہ بروری تھانے میں درج کر لیا گیا ہے، مقدمہ شہید ایس پی کے بھائی کی مدعیت میں نامعلوم افراد کیخلاف درج کیا گیا۔

پولیس حکام کے مطابق مقدمے میں قتل، اقدام قتل، دہشتگردی سمیت دیگردفعات شامل کی گئی ہیں۔

پولیس کے مطابق واقعے کی تفتیش جاری ہے، ملزمان کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز کوئٹہ کے علاقے کلی دیبہ میں گزشتہ روز نامعلوم افراد نے ایس پی کی گاڑی کو نشانہ بنایا تھا۔۔۔۔ فائرنگ کے نتیجے میں ایس پی مبارک شاہ اور ان کے تین محافظ شہید ہوگئے تھے، ایس پی مبارک شاہ کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ اپنے گھر سے آفس جا رہے تھے

زرائع کے مطابق جس علاقے میں ایس پی کونشانہ بنایا گیا وہ کوئٹہ کے نواحی علاقوں میں شمار ہوتا ہے، جو گنجان آباد اور کاروباری علاقہ ہے، جہاں سے موٹرسائیکل پر سوار مسلح افراد فائرنگ کرکے باآسانی فرار ہوگئے۔


مزید پڑھیں :  کوئٹہ فائرنگ، ایس پی قائدآباد سمیت 4 پولیس اہلکارشہید


واضح رہے کہ صوبے میں اب تک دہشت گردی کے مختلف واقعات میں 23افسران سمیت آٹھ سو بتیس پولیس اہلکار شہید کئے گئے ، کوئٹہ میں دہشت گردوں کا نشانہ بننے والے ایس پی قائد آباد سید مبارک شاہ 23 پولیس افسر ہیں، جو دہشت گردوں کے حملے میں شہید ہوئے۔

قبل ازیں ڈی آئی جی آپریشنز کوئٹہ فیاض احمد سنبل ،سابق ڈی آئی جی قاضی عبدالواحد،ایس ایس پی قلعہ عبداللہ ساجد خان مہمند کے علاوہ سترہ ڈی ایس پیز،خالد گرمکانی ،شہریاب خان ،عبدالرب لاسی،حسن علی ،غلام محمد ،محمد علی ،حبیب اللہ ،ظاہر شاہ کاظمی،منظور خان ترین ،شاہ نواز،محمد جمیل کاکڑ،مجاہد حسین،محمد نسیم ،امیر محمد دستی،عبدالخالق ،شمس الرحمان اور عمرالرحمان صوبے کے مختلف علاقوں میں دہشت گردی کے واقعات میں جام شہادت نوش کرچکے ہیں ۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں