site
stats
پاکستان

مردم شماری میں شناختی کارڈ کی شرط لازمی نہیں، چیف شماریات

راولپنڈی+ اسلام آباد + کراچی: مردم شماری کے معاملات کو حتمی شکل دینے کے لیے فوجی اور سول قیادت کے درمیان اہم اجلاس منعقد ہوا، چیف شماریات نے کہا ہے کہ مردم شماری کے لیے شناختی کارڈ لازمی نہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق مردم شماری سے متعلق کور ہیڈ کوارٹرز میں فوجی اور سول حکام کے درمیان ایک اجلاس منعقد ہوا جس کی صدارت کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل سرفراز ستار نے کی۔

اطلاعات کے مطابق مردم شماری سے متعلق انتظامات کا جائزہ لیا گیا، شرکا نے متعلقہ محکموں کے ممکنہ اقدامات سے متعلق بریفنگ دی۔ لیفٹیننٹ جنرل سرفراز ستار نے اقدامات کی بہتری کے لیے ہدایات دیں اور ہم آہنگی اورخوش اسلوبی پر زور دیا۔

مردم شماری میں شناختی کارڈ کی شرط لازمی نہیں، چیف شماریات

اسلام آباد: چیف شماریات آصف باجوہ نے کہا ہے کہ مردم شماری میں شناختی کارڈ کی شرط لازم نہیں ہے،جولائی تک مردم شماری کی سمری کے نتائج حکومت کو فراہم کردوں گا۔

یہ بات انہوں نے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں کمیٹی کے شرکا کے پوچھے گئے سوالات کے جوابات میں کہی۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس منعقد ہوا جس میں مردم شماری پر بات کی گئی، اجلاس میں اراکین کے ساتھ ساتھ چیف شماریات و مردم شماری کمشنر آصف باجوہ بھی موجود تھے۔

رکن قائمہ کمیٹی جمال الدین نے کہا کہ فاٹا کے عوام کو مردم شماری میں الگ حیثیت میں شمار کیا جائے،سارے آئی ڈی پیز واپس اپنے علاقوں میں نہیں گئے۔

قائمہ کمیٹی کے رکن اسد عمر نے کہا کہ مسئلے کا حل مشترکہ مفادات کونسل کی سطح پر حل نکالا جائے جس پر کمیٹی نے ہدایت دی کہ فاٹا عمائدین کو فاٹا سے متعلق فیصلوں میں شامل کیا جائے۔

چیف شماریات آصف باجوہ نے قائمہ کمیٹی کو کہا کہ مردم شماری میں شناختی کارڈ کی شرط لازم نہیں ہے، نادرا کے مطابق ہر گھر میں کم از کم ایک شناختی کارڈ ضرور ہے، قانونی اور غیر قانونی ہر کسی کو شمار کیا جائے گا۔

اعتراض کرتے ہوئے رکن کمیٹی اسد عمر نے کہا کہ شناختی کارڈ کی شرط ہی نہیں تو مردم شماری کے نتائج کون تسلیم کرے گا۔

کمیٹی نے چیف شماریات سے سوال کیا کہ کیا مردم شماری مقررہ وقت پر ہی ہورہی ہے؟ جس پر جواب دیتے ہوئے آصف باجوہ نے کہا کہ جولائی کے آخر تک مردم شماری کی سمری کے نتائج حکومت کو فراہم کردوں گا۔

شناختی کارڈ لازمی ہیں، نادرا اپنے دفاتر 5 بجے کے بعد بھی کھولے، چیف سیکریٹری سندھ

دوسری جانب چیف سیکریٹری سندھ نے نادرا حکام کو خط لکھا ہے کہ مردم شماری میں شناختی کارڈ لازمی ہے، اکثر شہریوں نے شناختی کارڈ نہیں بنوائے،شہریوں کو شناختی کارڈ بنوانے اور اجرا کے لیے دفاتر5 بجے تک کھلے رکھے جائیں۔

انہوں نے ساتھ ہی مردم و خانہ شماری کے دفاتر بھی پانچ بجے کے بعد تک کھلے رکھنے کا مطالبہ کیا ہے۔

سندھ بھر کے نادرا دفاتر کو سیکیورٹی کیلئے کمشنرز کو خط ارسال

دریں اثںا انہوں نے نادرا دفاتر کو سیکیورٹی فراہم کرنے کے لیے کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کو مراسلہ ارسال کردیا ہے ان میں کراچی، حیدرآباد، لاڑکانہ، سکھر، میرپورخاص، بے نظیر آباد کے کمشنر اور ڈی سیز شامل ہیں، خط میں کہا گیا ہے کہ عوام کو نادرا دفاتر پہنچانے کے لیے آگاہی بھی فراہم کی جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top