مردم شماری کہاں سے شروع ہو، فیصلہ فوج کرے گی، آصف باجوہ census army
The news is by your side.

Advertisement

مردم شماری کہاں سے شروع ہو، فیصلہ فوج کرے گی، آصف باجوہ

اسلام آباد: چیف کمشنر مردم شماری آصف باجوہ نے کہا ہے کہ مردم شماری کا آغاز کس ضلع سے ہوگا؟ یہ فیصلہ فوج کرے گی، خواجہ سرا اور مہاجرین کو بھی مردم شماری میں شامل کیا جائےگا۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے سمندر پار پاکستانیز اور انسانی وسائل کا اجلاس معنقد ہوا جس میں مردم شماری کے معاملات پر بات کی گئی۔

چیف شماریات اور چیف کمشنر مردم شماری آصف باجوہ نے کہا ہے کہ مردم شماری کا آغاز کن اضلاع سے کرنا ہے اس بات کا فیصلہ فوج کرے گی، مرد، خواتین اور خواجہ سراؤں کے لیے الگ الگ کوڈ مقرر ہیں، مردوں کے لیے کوڈ 1، خواتین کے لیے کوڈ 2 مقرر کیا گیا ہے، مردم شماری میں خواجہ سراؤں کو شامل کیا جائے گا ان کے لیے کوڈ 3 مخصوص کیا گیا ہے۔

ان کہنا تھا کہ مہاجرین کو بھی مردم شماری میں شامل کیا جائے گا،کیمپس میں رہائش پذیر مہاجرین کا ریکارڈ کیمپس سے لیا جائے گا۔

رکن کمیٹی شیخ صلاح الدین نے کہا کہ کوشش ہے کہ سمندر پار پاکستانیوں کو ووٹ کا حق ملے،سمندر پار پاکستانیوں کو مردم شماری میں شامل کیا جائے، اس حوالے سے کوئی بھی ترمیم کرنے کے لیے تیار ہیں۔

رکن کمیٹی عائشہ نے کہا کہ متحدہ عرب امارات میں 70 لاکھ پاکستانی رہائش پذیر ہیں، تقریباً ایک کروڑ پاکستانیوں کو مردم شماری سے نکال رہے ہیں،ایسا کیا گیا تو دنیا میں بہت غلط پیغام جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ خواجہ سراؤں اور معذور افراد سے متعلق مردم شماری فارم میں جگہ نہیں جس پر چیف شماریات آصف باجوہ نے کہا کہ فارم 2007 میں پرنٹ ہوئے تب ایسے مسائل نہیں تھے، نئے فارمز بنانے کے لیے کافی وقت لگ جائے گا،ساڑھے5 کروڑ فارمز کو ضائع نہیں کرسکتے۔

چیف شماریات آصف باجوہ مزید کہا کہ ہم معذور افراد کو نظر انداز نہیں کر رہے، کوشش ہے کہ جلد از جلد مردم شماری مکمل کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں