The news is by your side.

Advertisement

سینٹرل جیل کراچی، قیدی اسپتال کے بہانے گھرپہنچ جاتے ہیں

کراچی : تحقیقات کے بعد یہ اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ سینٹرل جیل سے کئی قیدی بغیر کسی بیماری کے اسپتال میں داخل ہیں جہاں انہیں ہرقسم کی سہولت حاصل ہیں اور وہ اسپتال سے اپنے گھر بھی آتے جاتے رہتے ہیں،شاہ زیب قتل کے ملزم شاہ رخ جتوئی کو بھی خصوصی سہولیات میسر ہیں۔

تفصیلات کے مطابق رینجرز کے جیل پرچھاپے کے بعد قیدیوں سے متعلق تحقیقات کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے قیدیوں کی فردآ فردآ جانچ پڑتال سے ہولناک انکشافات سامنے آئے ہیں۔

سینٹرل جیل کے کئی خطرناک قیدی بغیرکسی بیماری کے جناح اسپتال میں داخل ہیں جہاں انہیں ہر قسم کی سہولت بھی حاصل ہے اوروہ اپنے گھر بھی آتے جاتے رہتے ہیں جس سے عدالت کو مکمل طور پر بے خبر رکھا جاتا ہے۔

*سینٹرل جیل کراچی میں طویل سرچ آپریشن، قیدیوں سے 35 لاکھ رقم برآمد

ملزم شاہ رخ جتوئی سینٹرل جیل سے گھر پہنچ جاتا ہے


ذرائع کے مطابق شاہ زیب قتل کیس کا مجرم شاہ رخ جتوئی کسی بیماری کے بغیر جناح اسپتال میں زیرعلاج ہیں جہاں جناح اسپتال میں سہولتیں میسربھی ہیں اور گھر بھی آنا جانا رہتا ہے۔

خیال رہے کہ زیِرعلاج ہونے یا گھرجانے سے متعلق عدالت سے اجازت نہیں لی جاتی ہے بلکہ ایسے قیدی جنہیں سزا سنائی جا چکی ہے وہ جیل انتظامیہ سے ملی بھگت کے بعد بیماری کا بہانہ بنا کر اسپتال منتقل ہوجاتے ہیں۔

قیدی موبائل جیمرز کا توڑ جانتے ہیں


زرائع کے مطابق یہ انکشاف بھی سامنے آیا ہے کہ سینٹرل جیل میں موبائل فون کام کرتے ہیں جس کے لیے جیمرز باہر کی طرف لگائے گئے ہیں جواندرکام نہیں کرتے تاہم جیل میں کبھی کبھی جیمرزکوایکٹیویٹ کیا جاتا ہے۔

 


سینٹرل جیل سے کالعدم جماعت کے 2 خطرناک قیدی فرار*


قیدی جیل میں پی سی او چلارہے ہیں


جیل میں موبائل استعمال کرنےوالےملزمان سے لاکھوں روپے لیے جاتے ہیں جب کہ کچھ قیدی جیل میں با قاعدہ موبائل پی سی او چلاتے ہیں اسی طرح اگر قیدیوں نے موبائل جیمرزکا توڑ بھی تلاش کیا ہواہے اور اگر جیمرزآن ہوجائیں تومخصوص موبائل کمپنی کی سم کام کرنے لگتی ہے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں