The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیرمیں مسلمان سنتِ ابراہیمی کی ادائیگی سے محروم

سری نگر: عید الاضحیٰ کے موقع پر بھی مقبوضہ کشمیرمیں بھارت کی ریاستی دہشت گردی جاری، کشمیری عوام قربانی کرنے سے بھی محروم رہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ وادی کشمیر میں بھارتی حکومت کی جانب سےبدستورکرفیوکانفاذ جاری ہے ، کشمیر میڈیا سروس کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کاروبارِ زندگی بری طرح معطل ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے مقبوضہ کشمیر کے رہنے والے عید الاضحیٰ کے موقع پر سنت ِ ابراہیمی کی ادائیگی سے بھی محروم رہے جبکہ مقبوضہ کشمیرکامواصلاتی ذرائع کابلیک آؤٹ جاری ہے۔

یاد رہے کہ بھارت کی جانب سے آرٹیکل 370 اور آرٹیکل 35 اے منسوخ کیے جانے کے بعد سے مقبوضہ کشمیر میں حالات مسلسل خراب ہیں، عوامی احتجاج کو روکنے کے لیے بھارت نے بد ترین کرفیو نافذ کررکھا ہے۔

جنت نظیر مقبوضہ وادی کشمیر پر قابض ظالم بھارتی افواج نے کشمیری عوام پر مذہبی اجتماع منعقد کرنے کی پابندی عائد انہیں نمازِ عید کی ادائیگی سے بھی روک دیا ہے، جو کہ بنیادی انسانی حقوق میں شامل ہے۔

پاکستانی دفترِ خارجہ نے اس حوالے سے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا تھا کہ پاکستان کشمیری مسلمانوں کے لاک ڈاؤن کی سخت مذمت کرتا ہے، بھارت فوج نے مسلمانوں کو مذہبی تہوار منانے سے روکا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا تھا کہ نماز ادا کرنے کی پابندی بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے،دنیا بھر میں مسلمان بڑے اجتماعات میں نماز عید ادا کرتے ہیں، بھارتی حکومت نےانسانی حقوق اور عالمی قوانین دونوں کی خلاف ورزی کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں