The news is by your side.

Advertisement

امریکی انتظامیہ بھارت کی زبان بول رہی ہے، وزیر داخلہ

اسلام آباد: وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ امریکی انتظامیہ بھارت کی زبان بول رہی ہے، مودی کے بیان سے لگتا ہے کہ امریکا کے نزدیک کشمیریوں کی کوئی اہمیت نہیں۔

یہ بات انہوں نے بھارتی وزیراعظم کے دورہ امریکا میں ٹرمپ کی جانب سے پاکستان مخالف دیے گئے بیانات کے رد عمل کے طور پر کہی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ بھارتی حکومت کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں میں ملوث ہے،بھارت کشمیریوں کی حق خود ارادیت تحریک دبانے میں مصروف ہے،بھارت آزادی کی کاوشوں کو دہشت گردی کے طور پر پیش کررہا ہے،بھارت کے غاصبانہ طرز عمل پر ہر باضمیر قوم کو تشویش ہونی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ مودی کے بیان سے لگتا ہےکہ امریکا کے نزدیک کشمیریوں کی کوئی اہمیت نہیں، شاید انسانی حقوق قوانین کا کشمیر میں اطلاق نہیں ہوتا،مقبوضہ کشمیر میں خون سے ہولی کھیلنے والی ریاستی دہشت گردی میں ملوث حکومت کو کیسے فراموش کیا جاسکتا ہے؟

نثار نے کہا کہ کشمیر پر انسانی حقوق کی علم بردار طاقتوں کی قلعی کھلتی ہے،پاکستان کشمیریوں کی سیاسی،سفارتی،اخلاقی حمایت جاری رکھےگا، ثابت قدمی سے ہر پلیٹ فارم پر کشمیریوں کا مقدمہ لڑتے رہیں گے کشمیری عوام کے حقوق پر کوئی سودے بازی نہیں ہوگی۔

انہوں نے مزید کہا کہ کشمیریوں کو جائز حق ملنے تک ہماری جدوجہد جاری رہےگی،کشمیریوں کو حق خود ارادیت سے کوئی طاقت محروم نہیں کرسکتی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں