The news is by your side.

Advertisement

ملا منصور کی ہلاکت کا فیصلہ ڈی این اے رپورٹ کے بعد کیا جائے گا، چوہدری نثار

اسلام آباد: وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان نے کہا ہے کہ امریکہ نے ڈرون حملہ کرنے کے 7 گھنٹے بعد پاکستانی حکام کو آگاہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ نے حالیہ ڈرون حملے کے حوالے سے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ حملہ اتوار کی دوپہر 3:30 منٹ پر کیا گیا، حملے کے بعد ایف سی اور تحقیقاتی ادارے جائے وقوعہ پر پہنچے تو وہاں تباہ شدہ گاڑی سمیت 2 جلی ہوئی ناقابل شناخت نعشیں اور ایک پاسپورٹ برآمد ہوا۔

حملے میں ہلاک ہونے والے ایک شخص کی شناخت ہوگئی ہے، جس کی نعش اہل خانہ کے حوالے کردی گئی ہے جبکہ دوسری نعش کے حوالے سے آج افغانستان سے ملا اختر منصور کے قریبی عزیز نے لاش حوالگی کے حوالے سے درخواست دی ہے، جس کو ڈی این اے کی رپورٹ آنے کے بعد حوالے کیا جائے گا۔

افغانستان اور طالبان ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق ڈرون حملے میں طالبان رہنماء کو ہی نشانہ بنایا گیا ہے مگر ڈی این اے ٹیسٹ کی رپورٹ آنے کے بعد ہی حتمی شناخت کا اعلان کیا جائے گا۔

چوہدری نثارعلی خان نے کہا کہ گاڑی کو پاکستان میں نشانہ بنانے کی منطق سمجھ سے بالا تر ہے، باوثوق اطلاعات کے مطابق ڈرون طیاروں نے سرحدی خلاف ورزی نہیں کی بلکہ حملہ کسی دوسرے ملک سے کیا گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر ملا اختر منصور امریکہ کے لیے خطرہ تھا تو اُسے بحرین، افغانستان یا کسی دوسرے ملک میں نشانہ کیوں نہیں بنایا گیا؟ اگر پاکستانی ایجنسیز طالبان کو سہولت فراہم کر رہی ہوتیں تو اتنا بڑا رہنماء بغیر سیکورٹی کے عام گاڑی میں پاکستان کی حدود میں داخل کیوں ہوتا، ایسے شخص کے لیے تو بہترین انتظامات کیے جاتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم پاکستان کی وطن واپسی کے بعد نیشنل سیکورٹی کے حوالے سے مٹینگ منعقد کی جائیگی اور پاکستانی سالمیت کے لیے واضح پالیسی کا اعلان کیا جائے گا۔

چوہدری نثارعلی خان نے کہا کہ وزیر داخلہ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد سینکڑوں جعلی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ منسوخ کیے گئے ہیں۔

اداروں میں کرپٹ لوگ موجود ہیں کوئٹہ میں نادرا کے کچھ اعلیٰ عہدوں پر فائز ایسے لوگ گرفتار کیے گئے ہیں جنہوں نے افغانیوں کو قومی شناختی کارڈ جاری کیے۔

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ ڈرون حملے قابل مذمت ہیں، امریکہ نے جس بنیاد پر ڈرون حملہ کیا وہ غیرقانونی ہے اور ناقابل برادشت ہے، مشکل حالات کے باجود ہم طالبان کو مذاکرات کی میز پر لائے جس کی امریکہ نے خود بھی تعریف کی تھی۔

انہوں نے امریکہ کو دو ٹوک الفاظ میں پیغام دیتے ہوئے کہا کہ خطے میں امن کے لیے مذاکرات ہی واحد راستہ ہیں اور ہر مرتبہ پیشرفت ہونے پر ایسی خبریں سامنے لائیں گئی جن سے مذاکرات متاثر ہوئے ہیں۔

چوہدری نثار نے دعویٰ کیا کہ محمد ولی کاشناختی کارڈ منسوخ کردیا گیاتھا لیکن نادرا کے سسٹم میں اب بھی محمد ولی کے نام کی رجسٹریشن موجود ہے۔

اپنی پریس کانفرنس میں جس وقت چوہدری نثار علی خان دعویٰ کر رہے تھے کہ محمد ولی کاشناختی کارڈ منسوخ کردیا گیاتھا۔ اسی وقت اے آر وائی نیوز نے خبر دی کہ نادرا کے سسٹم میں اب بھی محمد ولی کے نام کی رجسٹریشن موجود ہے۔

اے آر وائی نیوز نے سوال اٹھا دیا کہ اگر محمد ولی کا شناختی کارڈ منسوخ کر دیا گیا تھا تو اس کا ریکارڈ ناردا کے سسٹم میں کیسے موجود ہے۔

Wali Muhammad toured the world and was targeted… by arynews

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں