site
stats
پاکستان

کریم اور اوبر ٹیکسی سروس کو بند نہیں کیا، حکومت پنجاب

لاہور : چیئرمین پنجاب آئی ٹی بورڈ ڈاکٹر عمر سیف نے کہا ہے کہ کریم اور اوبر سروس کو بند کرنے کےلیے حکومت نے کوئی نوٹیفیکیشن جاری نہیں کیا ہے۔

لاہور آئی ٹی ٹاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے وضاحت کی کہ کریم اور اوبر سروس کو بند نہیں کیا گیا ہے اور نہ ہی کوئی حکم نامہ جاری ہوا ہے البتہ میڈیا میں محکموں کی آپس کی خط وکتابت کو نوٹیفیکیشن ظاہر کرکے دیکھایا گیا ہے۔


اوبر اور کریم ٹیکسی سروس ‌غیر قانونی قرار، کریک ڈاؤن کا آغاز*


ڈاکٹر عمر سیف نے کہا کہ اوبر اور کریم ٹیکسی سروس نیٹ صارفین استعمال کر رہے ہیں جو کہ کسی بھی محکمے سے رجسٹرڈ نہیں اور کیوں کہ پاکستان میں یہ کاروبار نیا تھا اس لیے نئی پالیساں وضح کرنا بھی ضروری ہیں۔


*مشہورِزمانہ ٹیکسی سروس اوبرنے پاکستان میں آپریشن شروع کردیا


اُن کا کہنا تھا کہ ایک محتاط انداز کے مطابق 2000 سے زائد لوگ یہ ٹیکسی سروس چلا رہے تھے اور یہ تعداد دن بہ دن بڑھتی جا رہی تھی اس لیے نئی ٹیکسی سروس کے لیے اصول و ضوابط اور پالیساں مرتب کر رہے ہیں۔


*کریم ٹیکسی سروس، خواتین ڈرائیور بھی دستیاب ہوں گی


ڈاکٹر عمر سیف نے مزید کہا کہ ٹیکسی سروس کو نیٹ ورک میں لیا جائے گا جس کے بعد ان کمپنیز کو باقاعدہ رجسٹرڈ کیا جائے گا اس حوالے سے وزیر اعلٰی پنجاب نے نئی ٹیکسی سروس کی پالیسی کےلیے کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

واضح رہے پنجاب اور سندھ میں کریم اور اوبر ٹیکسی سروس کے خلاف کریک ڈاؤن آپریشن شروع کردیا گیا تھا جس کے بعد درجنوں گاڑیوں کو تحویل میں لے لیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top