The news is by your side.

Advertisement

نیب ہیڈ کوارٹرز کو بارود سے اڑانے کی دھمکی دی گئی ہے: جسٹس (ر) جاوید اقبال کا انکشاف

بدعنوانی کے خلاف نیب کا بلاتفریق جہاد جاری رہے گا

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے انکشاف کیا ہے کہ نیب ہیڈ کوارٹرز کو بارود سے اڑانے کی دھمکی دی گئی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ نیب کے سامنے پاکستان کے مفادات کاتحفظ اور بدعنوانی کا خاتمہ ہے.

گذشتہ 70 برس میں پہلی بار بدعنوان عناصر سے پوچھ گچھ کی گئی

چیئرمین نیب

چیئرمین نیب نے کہا کہ پنجاب میں کمپنیز اسکینڈل میں اربوں روپے کی مبینہ بدعنوانی ہوئی، بدعنوانی کے خلاف نیب کا بلاتفریق جہاد جاری رہے گا۔

انھوں نے کہا کہ اللہ اوراس کے رسولﷺکے علاوہ کسی سے نہیں ڈرتے، 70 برس میں پہلی بار بدعنوان عناصر سے پوچھ گچھ کی گئی.

چیئرمین نیب نے کہا کہ اختیارات کے میرٹ اور شفافیت سےعمل درآمد نہ کرنے پرپوچھا گیا، نیب فیس نہیں کیس دیکھتا ہے، نیب کا الیکشن سے کوئی تعلق نہیں.

ان کا کہنا تھا کہ نیب کے سامنے پاکستان کے مفادات کا تحفظ اور بدعنوانی کا خاتمہ ہے، پنجاب میں کمپنیزاسکینڈل میں اربوں روپےکی مبینہ بدعنوانی ہوئی، جس پر کارروائی کی جاری ہے۔

واضح رہے کہ اس وقت شریف خاندان کے خلاف نیب میں‌ تحقیقات جاری ہیں، جن کے باعث ن لیگ کی جانب سے نیب پر متعدد بار تنقید بھی کی گئی.

سیکیورٹی بڑھانے کے احکامات

چیئرمین نیب کے اس انکشاف کے بعد نگراں حکومت بھی حرکت میں آگئی۔ نگراں وزیر داخلہ کی جانب سے نیب ہیڈکوارٹرز کی سیکیورٹی بڑھانے کی ہدایت کر دی ہے۔


نیب نے بدعنوان عناصر سے اب تک289ارب وصول کیے، جسٹس (ر) جاوید اقبال


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں