The news is by your side.

Advertisement

اس وقت کوئی طاقت نہیں جو نیب کی ڈوری ہلائے،ڈوری ہلی تو بیگ اٹھا کر چلا جاؤں گا،چیئرمین نیب

اسلام آباد : چیئرمین نیب جسٹس(ر)جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ اس وقت کوئی طاقت نہیں جو نیب کی ڈوری ہلائے، جب کوئی ڈوری ہلی تو بیگ اٹھا کر چلا جاؤں گا۔

تفصیلات کے مطابق پی اے سی میں شرکت کے بعد چیئرمین نیب جسٹس(ر)جاوید اقبال نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ رپشن کےحجم کی بات تب کی جاتی ہےجب کم ہو، اب حجم سے بات آگے نکل گئی ہے، پی اے سی نے نیب کے کام پر اعتماد کا اظہار کیا، اس وقت کوئی طاقت نہیں جو نیب کی ڈوری ہلائے، جب کوئی ڈوری ہلی تو بیگ اٹھا کر چلاجاؤں گا۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نوازشریف کو روکنا میرا کام نہیں، نیب کسی قسم کی انتقامی کارروائی نہیں کر رہا، الیکشن ہونے یا نہ ہونے سے نیب کا کوئی تعلق نہیں، کچھ لوگوں کیخلاف انکوائری شروع ہو چکی مزید بھی ہوگی، جب شیشے کے گھر میں ہوں تو پتھر تو آئیں گے۔

جسٹس(ر)جاویداقبال نے کہا کہ برطانیہ میں مفرورنیب کو مطلوب افراد کیخلاف وارنٹ جاری کیے، وزیرداخلہ اتنا بااختیار نہیں لوگوں کو دوسروں کے حوالے کرے، صحافی نے سوال کیا یہ اختیارکس کا ہے؟ جس کے جواب میں چیئرمین نیب نے کہا کہ یہ آپ بااختیار لوگوں سے پوچھیں۔


مزید پڑھیں : کرپشن کی لعنت کاخاتمہ میری اولین ترجیح ہے،چیئرمین نیب


ان کا کہنا تھا کہ الیکشن ہونےیانہ ہونے سے نیب کا کوئی تعلق نہیں، جس نے کرپشن کی ہے وہ الیکشن سے پہلے بھی جوابدہ ہے اور بعد میں بھی، کچھ لوگوں کیخلاف انکوائری شروع ہوگئی، مزید کیخلاف جلد شروع ہوگی، یقین دلاتا ہوں کہ کیسز جلد انجام کو پہنچ جائیں گے۔

چیئرمین نیب نے سوال کیا کہ کیاکچھ مہینوں میں نیب کی ساکھ بحال نہیں ہوئی؟ اکتوبرمیں آیا اس کے بعد نیب کارکردگی سامنے ہے، اکتوبر کے بعد کوئی شکایت یا الزام نیب پر لگایا گیا تو بتائیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ کوئی مجھے برا بھلا کہے گا تو میں برانہیں مناؤں گا، نیب کو برا کہا جائے گا تو ادارےکادفاع کروں گا، یہ نہیں کہا کہ لوگ آفتاب شیرپاؤنے باہربھیجے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں