The news is by your side.

Advertisement

2013 کا الیکشن فکس تھا، ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے لیڈر ملک میں پیسا بنانے آتے ہیں، عمران خان

25 جولائی کو آزاد امیدواروں کا نہیں نظریاتی لوگوں کا الیکشن ہے، آزاد امیدوار جیتے تو بھی ان کی پی ٹی آئی میں جگہ نہیں ہوگی

ایبٹ آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ 2013 کا الیکشن فکس تھا، ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے لیڈر ملک میں پیسا بنانے آتے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے ایبٹ آباد میں جلسۂ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انھوں نے کہا کہ پچھلے انتخابات میں دونوں جماعتوں میں سمجھوتا تھا، دونوں نے باریاں لیں اور فرینڈلی اپوزیشن کی، ملک کو لوٹنا ان کا مُک مُکا تھا اور دونوں جماعتیں اپنے امپائر لانا چاہتی تھیں۔

عمران خان نے کہا کہ جب کوئی ان کی چوری پر ہاتھ ڈالتا ہے تو جمہوریت خطرے میں آجاتی ہے، 60 سال کی تاریخ میں پاکستان پر قرضہ 6 ہزار ارب تھا، بڑے بڑے ڈیم بنے، بجلی سستی تھی، 10 سال پہلے پاکستان کی ایشیا میں مثال دی جاتی تھی، لیکن ان دس سالوں میں قرضہ 6 ہزار سے 27 ہزار ارب پر پہنچ گیا ہے۔

بیورو کریسی ساتھ نہیں دے گی تو ہم کام یاب نہیں ہوں گے

عمران خان چیئرمین پی ٹی آئی

ان کا کہنا تھا کہ قرضے کا بوجھ اس لیے بڑھا کہ کرپٹ لوگوں کو اداروں میں بٹھایا گیا، نیب، ایف آئی اے، ایف بی آر بھی ان کو نہیں پکڑ سکتی تھی، قرضے واپس کرنے کے لیے ٹیکس لگا کر قیمتیں بڑھائی گئیں، مہنگائی ٹیکس لگنے سے آتی ہے، اس طرح ملک کا اربوں روپیا چوری کر کے باہر لے جایا گیا۔

عمران نے کہا ’کیپٹن صفدر گرفتاری دینے ایسے جا رہا ہے جیسے کشمیر فتح کر کے آیا ہے، انھیں شرم آنی چاہیے، قومیں تب مرتی ہیں جب اخلاق مر جاتے ہیں، پاکستان سب سے پیچھے رہ گیا بنگلا دیش آگے نکل گیا، دو ڈاکو زرداری اور نواز شریف ملک میں آ کر بیٹھ گئے۔‘

پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا ’سنا ہے اگلے جمعے باپ بیٹی مظلوم بن کر پاکستان آ رہے ہیں، ضرور آؤ، لیکن نواز شریف، نیلسن منڈیلا بننے کی کوشش نہ کرنا، نیلسن منڈیلا نے 27 سال قوم کی خاطر جیل میں گزارے۔‘

عمران خان نے کہا ’کوئی وزیر اعظم 300 ارب چوری کرلے تو اس کو باہر نکلنے کی جرأت نہیں ہوتی، لیکن یہاں غریب لوگ جیلوں میں ہیں اور طاقت ور کو پکڑنے والا کوئی نہیں ہے، پنجاب آڈیٹرجنرل رپورٹ کے مطابق راولپنڈی میٹرومیں 6 ارب کا نقصان ہوا۔‘

انھوں نے کہا کہ نا اہلی اور کرپشن سے فیصل آباد ہاؤسنگ اسکیم میں 25 ارب کا نقصان ہوا، گوجرانوالہ ہاؤسنگ اسکیم میں 24 ارب کا گھپلا ہے، ملتان ہاؤسنگ اسکیم میں عوام کو 8 ارب روپے، پنجاب ایکسائز اور فوڈ ڈیپارٹمنٹ کو 126 ارب اور دانش اسکول میں نا اہلی سے 100 ارب روپے کا نقصان ہوا۔

نواز شریف، نیلسن منڈیلا بننے کی کوشش نہ کرنا، نیلسن منڈیلا نے 27 سال قوم کی خاطر جیل میں گزارے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے مزید کہا کہ پاکستان تحریک انصاف نوجوانوں کے مستقبل کو بہتر کرے گی، 25 جولائی کو نوجوانوں کے مستقبل کا فیصلہ ہونے جا رہا ہے، برطانیہ سے لوگ پاکستان میں نوکری ڈھونڈنے آئیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ بیورو کریسی ساتھ نہیں دے گی تو ہم کام یاب نہیں ہوں گے، بیورو کریسی اور ادارے اکٹھے ہوں تو پاکستان مضبوط ہوگا، شہباز شریف نے سول سروس کو بے عزت کیا، ہم سول سروس کو پروفیشنل بنائیں گے، 60 کی دہائی میں ہماری بیورو کریسی پورے ایشیا میں مانی جاتی تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ 25 جولائی کو آزاد امیدواروں کا نہیں بلکہ نظریاتی لوگوں کا الیکشن ہے، آزاد امیدوار 25 جولائی کو جیتے تو بھی ان کی پی ٹی آئی میں جگہ نہیں ہوگی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں