site
stats
پاکستان

چمن، پاک افغان سرحد پر باب دوستی14روز کے بعد کھول دیا گیا

چمن : چودہ روز سے پاک افغان بارڈ پرباب دوستی بند رہنے سے افغان حکومت کے ہوش ٹھکانے آگئے اور تحریری طور پر معافی مانگ لی، پاکستانی حکام نے معذرت قبول کرتے ہوئے باب دوستی کھول دیا۔

تفصیلات کے مطابق چمن پاک افغان بارڈر چودہ روز بند رہنے کے بعد کھول دیا گیا، باب دوستی کھولنے کا فیصلہ افغان حکومت کی تحریری معذرت کے بعد کیا گیا، افغان حکومت کی جانب سے تحریری معذرت نامہ بدھ اکتیس اگست کو پاکستانی اور افغان سیکیورٹی حکام کے درمیان ہونے والی فلیگ میٹنگ میں پیش کیا گیا۔


 مزید پڑھیں : افغانستان نے معافی مانگ لی کل باب دوستی کھول دیا جائے گا


تحریری معذرت نامے میں افغان وفد کے کرنل محمد علی نے کہا کہ واقعہ غلط فہمی کا نتیجہ تھا، افسوس ناک واقعہ قابل مذمت اورناقابل برداشت تھا، آئندہ ہر ماہ دونوں فورسز کے درمیان فلیگ میٹنگ ہوگی ۔

پاکستانی سیکورٹی فورسز کے وفد کے سربراہ کرنل محمد چنگیز خان نے افغان فورسز کے تحریری معذرت قبول کرتے ہوئے کہا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ آئندہ ایسے واقعات رونما نہ ہوں ۔


 مزید پڑھیں :  باب دوستی پر کشیدگی ، پاک افغان فورسز کی فلیگ مٹینگ


باب دوستی 14 روز تک بند رہی تھی جس کے باعث نہ صرف پاک افغان عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا بلکہ تاجروں کو اربوں روپے کا نقصان ہوا اور فریش فروٹ سرحد پر کھڑے مال بردار ٹرکوں میں خراب ہوگئے تاہم باب دوستی پر کامیاب مذاکرات کے بعد کھولنے پر پاک افغان عوام میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔


 مزید پڑھیں :  مودی مخالف مظاہروں پر باب دوستی پراشتعال انگیزی، باب دوستی بند


واضح رہے کہ اٹھارہ اگست کو افغان شہریوں کی جانب سے چمن پاک افغان بارڈر پر باب دوستی پر پتھراؤ اور پاکستانی پرچم نزرآتش کرنے پر باب دوستی بند کردیا گیا تھا، جس کے باعث نیٹو سپلائی، پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ سمیت ہر قسم کی تجارت معطل ہوگئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top