The news is by your side.

Advertisement

میرا اختلاف پارٹی سے نہیں، نواز شریف سے ہے: چوہدری نثار

راولپنڈی: سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا کہنا ہے کہ ان کا اختلاف مسلم لیگ کے ساتھ نہیں بلکہ نواز شریف کے ساتھ ہے، فوج کے ساتھ مل کر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑی۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے راولپنڈی میں مختلف مقامات پر جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا، کہا 34 سال کی سیاست میں صرف اپنے علاقے کو ترجیح دی ہے، کبھی خود کو مخالف امیدوار کی طرح نہیں بیچا، نواز شریف کو بھی سمجھایا عدلیہ اور فوج کے ساتھ مت لڑو۔

چوہدری نثار نے چکری اور واہ کینٹ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کے مخالف کو جو حیثیت حاصل ہے وہ بھی محض اس لیے ہے کہ وہ چوہدری نثار کا مخالف ہے، کہا میں نے ہر گاؤں میں پکی سڑکیں بنائیں، اب ایک اور گاؤں کو بھی بجلی فراہم کر دی ہے۔

مسلم لیگ کے ناراض رہنما نے کہا کہ نواز شریف، عمران خان اور زرداری سن لیں، انھوں نے دریاے سواں کا پانی پیا ہے، ٹکٹ لینے کی بجائے اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کو ترجیح دی ہے۔ کہا ان کا مخالف آئے روز پارٹیاں تبدیل کرتا ہے اور انھوں نے عزت کے لیے سیاست کی۔

چوہدری نثار نے کہا کہ وہ برادری کی بجائے قومی سیاست کرتے ہیں، کہا اپنے علاقے کو ترقی کی راہ پر گام زن کیا، سیاست میں آکر کوئی فیکٹری یا مل نہیں لگائی، پورے حلقے میں خدمات ثبوتوں کے ساتھ موجود ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کے مخالفوں کے دور میں سڑکیں ٹوٹی پھوٹی ہوتی تھیں، اس علاقے میں کوئی جگہ ایسی نہیں جہاں ان کی خدمت کا نشان نہ ہو۔ کہا میں نے کالج، گلیاں، اسکول اور اسپتال بنوائے۔

چوہدری نثار کو ’جیپ‘ کا انتخابی نشان الاٹ


چوہدری نثار نے کہا میں نے خاکوں کے مسئلے پر کہا سوشل میڈیا بند کر دوں گا، سوشل میڈیا میرے ایمان سے بڑی چیز نہیں ہے۔

واضح رہے کہ چوہدری نثار اور نواز شریف کے درمیان ناراضی کے باعث ن لیگ نے انھیں ٹکٹ جاری نہیں کیا، جس پر انھوں نے آزاد حیثیت میں انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں