The news is by your side.

Advertisement

آدمی عہدے پر نہ ہو، تو اس کے کردار کا احساس کرنا چاہیے: چوہدری نثار

اسلام آباد: سابق وزیرداخلہ اور مسلم لیگ ن کے رہنما چوہدری نثار نے کہا ہے کہ آدمی اگر پوزیشن میں نہ ہو، تو اس کے کردار کا احساس کرنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق چوہدری نثار نے پریس کانفرس کرتے ہوئے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ اچھی گورننس پر توجہ دی جائے، میں نے اپنے آبائی علاقے میں بہت سے ترقیاتی کام کرائے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما نے کہا کہ سیاست پر تو باتیں کرتا رہتا ہوں، آج عوامی ایشو پر بات ہو تو بہتر ہے،  صرف عمارتیں بنانے سے کچھ نہیں ہوتا، بلکہ ضروری سہولتیں مہیا ہونی چاہیے، اپنے آبائی علاقے میں جو اسپتال بنارہا ہوں وہ پورے ڈسٹرکٹ کے لیے بڑا اسپتال ہوگا۔

چوہدری نثار نے کہا موجودہ حکومت کے صرف چھ ہفتے رہ گئے ہیں، انتخابات کے بعد جو بھی حکومت آئے گی وہ اس منصوبے کو آگے لے کر چلے گی۔ انھوں نے کہا کہ ایک دن خاموشی سے آکر معاملات دیکھوں گا۔

مسلم لیگ اچکزئی گروپ کے ساتھ نہیں چل سکتا، چوہدری نثار

انھوں نے اپنے بنائے ہوئے منصوبوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کلر سیداں اور پنڈی تحصیل میں جو اسپتال بنوائے وہ خوش اسلوبی سے کام کر رہے ہیں، یہ تینوں اسپتال پنڈی اور ٹیکسلا تحصیل کی بھی ضرورتیں پوریں کریں گے۔

سابق وزیر داخلہ نے پریس کانفرنس میں لڑکیوں اور اور لڑکوں کے لیے کالج اور متعدد اسکولوں کی منظوری کا ذکر کرتے ہوئے کہا اپنے دور اقتدار میں جو بھی کرسکتا تھا کیا۔

ماضی کے برعکس چوہدری نثار کی یہ کانفرنس انتہائی مختصر تھی۔ ایک صحافی کے سوال پر وہ پریس کانفرنس چھوڑ کر چلے گئے۔

واضح رہے کہ چوہدری نثار نے اپنے تازہ بیان میں کہا تھا کہ وہ مسلم لیگ اچکزئی گروپ کے ساتھ نہیں چل سکتے۔ آج احتساب عدالت کے باہر ایک صحافی نے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے تبصرے کے لیے استفسار کیا تو انھوں نے سوال کا گول مول جواب دے کر معاملہ نظر انداز کردیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں