The news is by your side.

Advertisement

کیمسٹری کے پروفیسر سید حامد حسین بھی چارسدہ سانحے میں شہید

چارسدہ : باچا خان یونیورسٹی چارسدہ پر دہشت گرد حملے میں شہید ہونے والے پروفیسرسید حامد حسین نے حال ہی میں برطانیہ سے کیمسٹری میں پی ایچ ڈی ڈگری حاصل کی تھی۔

ابتدائی تعلیم انہوں نے اپنے شہر کے گورنمنٹ ہائی اسکول سے حاصل کی، جس کے بعد پشاور یونیورسٹی سے شعبہ کیمیا میں بیچلر اور ایم فل کی ڈگری حاصل کی۔ وہ باچا خان یونیورسٹی میں اسسٹنٹ پروفیسر کی حیثیت سے تعینات تھے۔

پروفیسرحامدحسین کےدوبچےہیں، وہ طلبا میں انتہائی مقبول تھے، پروفیسرڈاکٹرسیدحامد حسین باچا خان یونیورسٹی چارسدہ میں علم کی روشنی بانٹ رہے تھے۔ دہشت گردوں نے موت بانٹی تو وہ بھی گولی کانشانہ بن گئے۔

تعلیم کا زیوربانٹنے والے استاد نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پرجو آخری پوسٹ کی وہ بھی تعلیم سے ہی متعلق تھی۔ اسسٹنٹ پروفیسرحامد حسین نے 17 جنوری کو صبح 8 بج کر41 منٹ پرآخری پوسٹ کی جس میں انہوں نے پاکستانی طلبا کو ورلڈ بینک فیلو شپ کی ترغیب دی۔

ان کے ایک کزن کا کہنا ہے کہ ڈاکٹرحامد چاہتے تودنیا میں کہیں بھی جاسکتے تھے۔ لیکن انہوں نےاپنےملک اوراپنےصوبے کوترجیح دی، دہشت گردوں نے ایک استاد کو شہید نہیں کیا۔ امید حوصلےاورروشنی کاچراغ گل کرنے کی ناکام کوشش کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں