The news is by your side.

Advertisement

سابق مس امریکا نے خودکشی کیوں کی؟ والدہ کا اہم انکشاف

نیو یارک: امریکی شہر نیویارک کی ایک کثیر المنزلہ عمارت سے چھلانگ لگا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے والی سابق مس امریکا چیلسی کرسٹ کی والدہ کا بیٹی کی خودکشی کے بعد پہلا بیان سامنے آگیا ہے۔

سابق مس امریکا چیلسی کرسٹ کی والدہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ چیلسی کچھ وقت سے شدید ذہنی تناؤ کا شکار تھی، وہ زیادہ کام کرنے کی وجہ سے ڈپریشن میں مبتلا ہوئی، اگرچہ بیٹی کی خودکشی حقیقت ہے لیکن یقین نہیں آ رہا۔

انہوں نے کہا کہ چیلسی کرسٹ کی اچانک موت پر شدید صدمے سے دو چار ہوں، میں سمجھتی ہوں اس سے بڑا صدمہ میرے لیے اور کچھ نہیں ہوسکتا، خاندان کے تمام لوگ بیٹی کی خودکشی پر صدمے میں ہیں۔

سابق مس امریکا کی والدہ نے کہا کہ بیٹی کی موت کے دُکھ نے دنیا بدل کر رکھ دی، ہمیں چیلسی کے جملے اور حس مزاح  بہت یاد آتا ہے۔

31 جنوری کو امریکا میں نیویارک شہر کی ایک بلند و بالا عمارت کے اپارٹمنٹ سے چھلانگ لگا کر سابق مس امریکا چیلسی کرسٹ نے خود کشی کرلی تھی۔

پولیس حکام نے بتایا تھا کہ اتوار کو مِڈ ٹاؤن کی ایک بلند و بالا عمارت سے کود کر خودکشی کرنے والی خاتون سابق مس یو ایس اے چیسلی کرسٹ تھیں۔

2019 کا مقابلہ حسن جیتنے والی چیلسی کرسٹ کا اپارٹمنٹ مین ہٹن میں 60 منزلہ اورین بلڈنگ کی نویں منزل پر تھا، جو اتوار کی صبح نیچے گلی میں مردہ پائی گئیں۔

عمارت سے چھلانگ لگانے سے کچھ ہی دیر قبل چیلسی کرسٹ نے اپنے انسٹاگرام پیج پر ایک پوسٹ میں لکھا کہ "یہ دن آپ کے لیے سکون اور آرام لے کر آئے۔”

چیلسی کے اہل خانہ نے ایک بیان میں کہا کہ چیسلی نے ہمیشہ دوسروں کی خدمت کی، وہ مجسم محبت تھی، چاہے وہ سماجی انصاف کے لیے لڑنے والے وکیل کے طور پر ہو، مس یو ایس اے کے طور پر یا ایکسٹرا پر میزبان کے طور پر، لیکن سب سے اہم بات یہ ہے کہ ایک بیٹی، بہن، دوست، سرپرست اور ساتھی کے طور پر اس کی یاد زندہ رہے گی۔

رپورٹس کے مطابق عمارت کی نویں منزل پر رہنے والی چیلسی کرسٹ خود کشی کے وقت اپارٹمنٹ میں اکیلی تھیں، اور انہیں آخری بار 29 ویں منزل کی چھت پر دیکھا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں