site
stats
سندھ

سیکورٹی کلیئرنس کے بغیرجرمن شہری پی آئی اے کا چیف آپریٹنگ افسرتعینات

کراچی : جرمن شہری سیکورٹی کلیئرنس کے بغیر ہی پی آئی اے کا چیف آپریٹنگ افسر تعینات کردیا گیا۔ ذرائع کے مطابق برانڈ برنڈ اکتوبر 1994 تا نومبر1996 کی مدت میں ایک ائیرلائن کا بھارت میں سینئر نائب صدر بھی رہا ہے۔

معاہدے کے مطابق چیف آپریٹنگ افسر کی تعیناتی سیکورٹی سے مشروط قرار دی گئی ،معاہدے میں تعیناتی سے قبل انٹیلیجنس بیورو،اسپیشل برانچ کی کلیئرنس لازمی قراردی گئی ہے۔

انتظامیہ نے جرمن شہری کو سیکورٹی کلیئرنس سے قبل ہی فروری میں جوائننگ کرا دی،ذرائع کے مطابق نئے چیف آپریٹننگ افسر کی سیکورٹی کلیئرنس تا حال انتظامیہ کو موصوکل نہیں ہوئی۔

کلیئرنس کے بغیر غیر ملکی کی اعلی انتظامی عہدے پر تعیناتی سیکورٹی رسک ہے،دستاویز ات کے مطابق دو سالہ کنٹریکٹ پرجرمن شہری کو 12 ہزار ڈالرز تنخواہ پر ملازم رکھا گیا۔

تنخواہ پر تمام ٹیکسز کی ادائیگی پی آئی اے کرے گی،جرمن شہری کو لگڑری کار بمعہ ڈرائیور، سیکورٹی گارڈ بھی فراہم کیا گیا ہے،بین الاقوامی پروازوں کے بارہ فرسٹ کلاس کے مفت ٹکٹ بھی جاری کئے جائیں گے۔

کمپنی پالیسی کے مطابق اندرون ملک پروازوں پر مفت ٹکٹ بھی جاری ہوں گے ،ڈپٹی مینجنگ ڈائریکٹر کے عہدے کی گروپ انشورنس اور میڈیکل سہولیات بھی فراہم کی جائیں گی۔

اہل خانہ کو بھی مفت ٹکٹ اور میڈیکل کی سہولیات بھی فراہم کی جائٰیں گی،سرکاری ٹور کی صورت میں بطور ڈی ایم ڈی ٹی اے ڈی بھی جاری کیا جائے گا،متعلقہ اداروں سے سی او او کی سیکورٹی کلیئرنس کے منتظر ہیں۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top