The news is by your side.

” جو کھلاڑی پر کارکردگی دکھائے گا وہی ٹیم میں شامل ہوگا”

راولپنڈی: چیف سلیکٹر پی سی بی محمد وسیم کا کہنا ہے کہ جو کھلاڑی کارکردگی دکھائے گا وہ ٹیم میں ضرور شامل ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی میں سینٹرل کنٹریکٹ کے اعلان کے موقع پر صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے چیف سلیکٹر نے کہا کہ کھلاڑیوں کے کنٹریکٹ کے مطابق پچھلے بارہ اور اگلے بارہ ماہ کی کارکردگی دیکھی جاتی ہے اس کے علاوہ فٹنس کا معیار بھی کنٹریکٹ میں مد نظر رکھا گیا ہے، جو لڑکے منتخب کئے گئے وہ اگلے بارہ ماہ میں کھیلتے نظر آئینگے۔

محمد وسیم نے کہا کہ سینٹرل کنٹریکٹ میں ریڈبال اور وائٹ بال دونوں فارمیٹس کو ترجیح دی گئی ہے، مالی طور پر سینٹرل کنٹریکٹس کی کیٹیگریز کی ویلیو الگ الگ ہے،اکٹھے کنٹریکٹس سے چند کھلاڑیوں کو اہمیت نہیں دی جاتی، دو کنٹریکٹس میں کھلاڑیوں کو دونوں فارمیٹس کھیلنے پرحوصلہ افزائی ملےگی۔

یہ بھی پڑھیں: سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان، سرفراز اور شان مسعود کی تنزلی

چیف سلیکٹر نے واضح کیا کہ ضروری نہیں کہ صرف سینٹرل کنٹریکٹس پر مبنی ہی سلیکشن ہوگی،اگر ڈومیسٹک میں پرفارمنس دیں گے تو سلیکشن ہوگی، جو کھلاڑی پرفارمنس دےگا وہ قومی کرکٹ ٹیم میں منتخب ہوگا، ایسی بات نہیں کہ وائٹ بال سینٹرل کنٹریکٹ والا ریڈبال نہیں کھیل سکتا۔

کرکٹر موسی خان اور سلمان ارشاد سے متعلق پوچھے گئے سوال پر چیف سلیکٹر نے کہا کہ موسیٰ خان نے تینوں فارمیٹس میں پاکستان کی نمائندگی کی ہے جبکہ کشمیری بولرسلمان ارشاد کا ایکشن الگ ہے پرفارمنس دینگے تو ضرور منتخب ہونگے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں