The news is by your side.

بچوں سے زیادتی کے مقدمات، ہائیکورٹ کا بڑا حکم

لاہور ہائیکورٹ نے بچوں سے زیادتی کے مقدمات کا تیزی سے فیصلے کرنے کا حکم دے دیا۔

جسٹس طارق سلیم شیخ نے بچے سے زیادتی کے ملزم ساجد عرف سجو کی درخواست ضمانت پر سماعت کی ۔ ‏عدالت نے ملزم کی ضمانت مسترد کرتے ہوٸے حکم دیا کہ بچوں سے زیادتی کے مقدمات کے تیزی سے فیصلے ‏ہونے چاہییں ایسے مقدمات کے ترجیحی طور پر 6 ماہ میں فیصلے کئے جائیں۔

عدالت نے قرار دیا کہ جہاں الزامات جھوٹ نکلیں وہیں کیس بنانے والوں کے خلاف کاروائی کی جائے بچوں سے ‏زیادتی کے قانون کو کچھ لوگ غلط استعمال کر سکتے ہیں جہاں بچوں کو زیادتی سے بچانے کی ضرورت ہے وہاں ‏بے گناہ کو جھوٹے الزامات سے بھی بچانا ہے۔ ‏

عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ ہمارے معاشرے عموما ایسے کیسز جلد رپورٹ نہیں ہوتے۔ عدالت نے رجسٹرار ‏لاہور ہائیکورٹ کو فیصلے کی نقول متعلقہ اداروں کو بھیجنے کا حکم بھی دیا۔ ملزم ساجد عرف سجو پر ٹوبہ ٹیک ‏سنگھ میں 6 سال کے بچے سے زیادتی کا مقدمہ درج ہے۔

ملزم کے وکیل نے کہا کہ مقدمہ وقوعہ کے سات دن بعد درج کرایا گیا. بدنیتی سے مقدمہ درج ہوا واقعہ سے ‏کوٸی تعلق نہیں لہذا ضمانت منظور کی جاٸے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں