The news is by your side.

Advertisement

اقوام متحدہ امن فورس پر بچیوں سے جنسی زیادتی کا ایک اور الزام

نیویارک: اقوام متحدہ امن فورس میں شامل نیپالی فوجیوں پر جنوبی سوڈان میں تعیناتی کے دوران کم سن بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزامات سامنے آگئے۔

تفصیلات کے مطابق جنسی زیادتی کا کیس سامنے آتے ہی اقوام متحدہ نے نیپالی حکومت سے تفتیشی ٹیم بھیجنے کی اپیل کی، جس پر نیپال نے تفتیشی ٹیم جنوبی سوڈان بھیجنے کا اعلان کردیا ہے۔

اقوام متحدہ نے جنسی زیادتی کے ہر عمل کو سنگین قرار دیتے ہوئے ایک بیان میں کہا ہے کہ خاص طور سے اگر کسی بچے کی بات کی جائے تو یہ اور بھی سنگین ہوجاتا ہے۔

عالمی ادارے کو ملنے والی رپورٹس کے مطابق امن مشن میں شامل نیپالی فوجیوں نے مبینہ طور پر نابالغ لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا، تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ اس سنگین کیس میں کتنے فوجی ملوث ہیں۔

امن مشن، اقوام متحدہ کا 7 شہید پاکستانی اہلکاروں کے لیے اعزاز

واضح رہے کہ جنوبی سوڈان میں اقوام متحدہ کی طرف سے امن مشن میں شامل فوجیوں اور پولیس اہل کاروں کی تعداد چودہ ہزار آٹھ سو ہے، جن کا مقصد صدر سلوا کیر کی فورسز اور باغیوں کی لڑائی میں متاثر ہونے والے عام شہریوں کی حفاظت ہے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل بھی اقوام متحدہ امن مشن فورس میں شامل اہل کاروں پر مختلف ممالک میں جنسی زیادتی کے الزامات لگتے رہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں