The news is by your side.

سیلاب سے متاثر 3 کروڑ سے زائد بچوں کو لائف سیونگ سپورٹ کی فوری ضرورت

اسلام آباد: نیشنل فلڈ رسپانس کوآرڈینیشن سینٹر کے اہم اجلاس میں بتایا گیا کہ 3 کروڑ 40 لاکھ سے زیادہ بچوں کو لائف سیونگ سپورٹ کی فوری ضرورت ہے، سیلاب کے نقصانات کا اندازہ لگانے کے لیے مشترکہ سروے جنگی بنیادوں پر مکمل کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق نیشنل فلڈ رسپانس کوآرڈینیشن سینٹر کا اہم اجلاس منعقد ہوا، اجلاس میں سیلاب سے انسانی زندگیوں، لائیو اسٹاک اور انفراسٹرکچر کو نقصانات پر بریفنگ دی گئی۔

اجلاس میں بتایا گیا کہ موجودہ سیلاب ملکی تاریخ کا بدترین تباہ کن سیلاب ہے، موجودہ سیلاب 2010 کے سیلاب سے کئی گنا زیادہ تباہی لایا۔

این ایف آر سی سی کے مطابق سیلاب سے متاثر ہونے والے 33 ملین افراد میں سے 16 ملین بچے ہیں، 3 کروڑ 40 لاکھ سے زیادہ بچوں کو لائف سیونگ سپورٹ کی فوری ضرورت ہے، سیلاب سے ہونے والی 1500 اموات میں 500 سے زیادہ بچے بھی شامل ہیں۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ بچوں اور حاملہ خواتین کو غذائیت کی کمی سے بچانے کی ضرورت ہے۔

این ایف آر سی سی کے مطابق سندھ میں پانی سے پھیلنے والی بیماریوں کا زیادہ خطرہ منڈلا رہا ہے، ڈینگی اور ہیضہ جیسی وباؤں کو روکنے کے لیے ہنگامی اقدامات کی ضرورت ہے۔

اجلاس میں کہا گیا کہ نقصانات کا اندازہ لگانے کے لیے مشترکہ سروے جنگی بنیادوں پر مکمل کیا جائے، سروے کے بعد موسم سرما سے پہلے عملی اقدامات کو یقینی بنایا جائے۔

این ایف آر سی سی نے ہنگامی بنیادوں پر انفراسٹرکچر کی بحالی کا بھی تفصیلی جائزہ لیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں