The news is by your side.

Advertisement

سین تیاگو: تعلیمی اصلاحات کےخلاف طلبا کا احتجاج

سین تیاگو: چلی کے دارالحکومت سین تیاگو میں تعلیمی اصلاحات کےخلاف طلبا نے کااحتجاج، پولیس نے متعدد طلبا کو حراست میں لے لیا.

تفصیلات کے مطابق چلی کے دارالحکومے سن تیاگو میں تعلیمی اصلاحات کے خلاف بزاروں کی تعداد میں طلبا کی جانب سے احتجاج کیا گیا.
سین تیاگو میں احتجاج کرنےوالے طلبا پر پولیس نے آنسو گیس کے شیل برسائے اورواٹرکینن کااستعمال کیا،طلبا وزارت تعلیم کے دفتر میں احتجاجی مراسلہ جمع کراناچاہتےتھے.

پولیس نے مڈھ بھیڑ کےبعدمتعدداحتجاجی طلباکوحراست میں لےلیا،طلبا تعلیمی نظام میں بہتری کی سست رفتاری کےخلاف احتجاج کررہے تھے.

پولیس سے احتجاجی مظاہرین کی مڈھ بھیڑ میں 140 چالیس طلبا کو گرفتار کرلیا گیا، جبکہ احتجاج کے دوران ایک صحافی کو بھی تشدد کا نشانہ بنایاگیا.

چلی میں طلبا کا تعلیمی اصلاحات پر عمل درآمد نہ ہونے کے خلاف احتجاج*

یاد رہے کہ چلی کی صدر نے غریب طلباء کے لیے مراعات، نئے اسکول اور ہر طالب علم کے لیے یونیورسٹی سطح کی تعلیم مفت کرنے کا وعدہ کیا تھا.صدر کی جانب سے تعلیمی اصلاحات پر عمل درآمد نہ ہونے پر طلبا سراپا احتجاج ہیں.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں