The news is by your side.

Advertisement

ایپلیکیشنز پر پابندی، چین نے بھارت کو خبردار کردیا

بیجنگ: چینی وزارت خارجہ نے خبردار کیا ہے کہ چین سے تعاون میں کمی بھارت کے اپنے مفاد کے خلاف ہے۔

تفصیلات کے مطابق چینی وزارت خارجہ نے اپنے تازہ بیان میں کہا کہ بھارت کی جانب سے 59چینی ایپلیکیشنز پر پابندی پر شدید تشویش ہے، صورت حال کا جائزہ لے رہے ہیں۔

وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ چین اور بھارت کا تعاون دونوں ممالک کے لیے فائدہ مند ہے، معاملے کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لے رہے ہیں، اس اقدام سے بھارت کو نقصان ہوگا، اُس کے اپنے ہی مفاد کے خلاف ہے۔

خیال رہے کہ بھارت نے چین کے ساتھ لداخ کے مقام پر ہونے والی جھڑپ کے بعد ٹک ٹاک سمیت 59 ایپلیکشنز پر پابندی عائد کردی ہے جو اب تک کا سب سے بڑا اقدام قرار دیا جارہا ہے۔ بھارتی حکومت کا کہنا ہے کہ ملکی خود مختاری، سالمیت اور دفاع کے لیے یہ قدم اٹھایا گیا ہے۔

بھارت نے ٹک ٹاک سمیت 59 ایپلیکشنز پر پابندی عائد کردی

مودی سرکار کے مطابق 130 کروڑ بھارتیوں کے ذاتی نوعیت کے ڈیٹا کی حفاظت کے لیے یہ اقدام کیا گیا ہے۔

ٹک ٹاک سمیت دیگر چینی ایپلیکیشنز پر پابندی سے بھارت کو بڑا دھچکا

دوسری جانب بھارت نے پابندیوں کے بعد متبادل کے طور پر جن ایپس سے متعلق صارفین کو استعمال کرنے کا مشورہ دیا ہے اسے شہری مسترد کرچکے ہیں، انہوں نے بھارتی ایپلیکیشنز کو غیرضروری اور فضول قرار دیا ہے، صارفین کی بہت بڑی تعداد حکومتی اقدام پر شدید تحفظات کا اظہار بھی کررہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں