The news is by your side.

Advertisement

چینی کرنسی کی مانگ میں اضافہ، ڈالر کے مستقبل کو خطرہ

پیرس: فرانس کے مرکزی بینک نے زرمبادلہ کے ذخائر چینی کرنسی میں تبدیل کرنے شروع کردیے جس کے بعد یوآن اور ڈالر کی قیمتوں میں سخت مقابلہ شروع ہوگیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کے مرکزی بینک نے زرمبادلہ کے ذخائر چینی کرنسی میں تبدیل کرنے شروع کردیے جبکہ مستقبل میں یوآن کے ذریعے لین دین کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اطلاع ہے کہ فرانس کے مرکزی بینک نے جیسے ہی زرمبادلہ کے ذخائر چینی کرنسی میں تبدیل کرنے کا اعلان کیا ساتھ ہی جرمنی نے بھی ذخائر یوآن میں تبدیل کرنے شروع کردیے۔

معاشی ماہرین کے مطابق چین کی معیشت روز بہ روز مضبوط ہورہی ہے جس کو مدنظر رکھتے ہوئے مختلف ممالک ڈالر کے بجائے اب چینی کرنسی میں لین دین کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

مزید پڑھیں: چینی یوآن پاکستانی روپے کے مقابلے میں 55 پیسے مہنگا

تجزیہ کاروں کا یہ بھی کہنا ہے کہ ’چین دنیا کے تمام ہی ممالک کے ساتھ تجارت کررہا ہے اسی بات کے پیش نظر بہت سے ممالک آئندہ یوآن میں ہی لین دین کریں گے اور اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو چینی کرنسی دیگر کے مقابلے میں سب سے زیادہ مہنگی ہوگی اور ڈالر پر سبقت لے جائے گی‘۔

معاشی ماہرین کا یہ بھی ماننا ہے کہ ’ٹرمپ حکومت آنے کے بعد تشکیل دی جانے والی پالیسیوں اور جارحانہ انداز کو دیکھتے ہوئے بڑے ممالک امریکا پر عدم اعتماد کا اظہار کررہے ہیں‘۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں