چینی صدر کی فوجی افسران کو اپنے نجی کاروبار مکمل بند کرنے کی ہدایت
The news is by your side.

Advertisement

چینی صدر کی فوجی افسران کو اپنے نجی کاروبار مکمل بند کرنے کی ہدایت

بیجنگ : چینی صدر نے فوجی افسران کو اپنے نجی کاروبار رواں سال کے آخر تک مکمل بند کرنے کی ہدایت کردی، احکامات فوج میں کرپشن ختم کرنےکی مہم کا حصہ ہیں۔

چینی میڈیا کے مطابق چینی صدر شی جن پنگ نے فوجی افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے نجی کاروبار رواں سال کے آخر تک مکمل بند کردیں اور جنگی تیاریوں پر توجہ دیں۔

چینی صدر کا کہنا تھا کہ ان کے احکامات سے  نہ کوئی مستثنیٰ نہیں ہوگا اور نہ کسی کو رعایت ملے گی ۔

میڈیا کے مطابق کہ صدر شی جن پنگ کے احکامات فوج میں کرپشن ختم کرنےکی مہم کا حصہ ہیں اور وہ اپنی فوج کو عالمی معیار کی لڑاکا فورس بنانا چاہتے ہیں۔

گوبل ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق فوج کے 94 فیصد نجی منصوبے پہلے ہی ختم کیے جاچکے ہیں جبکہ چین کا سینٹرل ملٹری کمیشن رواں سال کے آخر تک اپنے سارے کاروبار بند کردے گا۔

رپورٹ کے مطابق چینی فوج  جو کاروباری ادارے چلارہی ان  میں نرسری تعلیم، کمیونیکیشن ،بیرکس پروجیکٹس، پریس اینڈ پبلیکیشنز، کلچر اور کھیل،، پرسنل ٹریننگ، اسٹوریج اور ٹرانسپورٹیشن، رئیل اسٹیٹ، میڈیکل کیئر اور سائنٹیفک ریسرچ وغیرہ شامل ہیں۔

یاد رہے چینی صدر نے 3 سال قبل چینی فوج کی  پیڈ سروسز  ختم کرنے کا وعدہ کیا تھا ، جس کے بعد رواں سال جون چینی فوج کی جانب سے ایک لاکھ سے زائد پیڈ سروسز کو ختم کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ چینی فوج نے 70 کی دہائی میں کمرشل سرگرمیاں شروع کی تھیں جبکہ 1998 سے چینی فوج کو کاروباری سرگرمیوں سے دور کرنے کا مطالبہ  کیا جارہا تھا ۔

خیال رہے کہ چینی فوج کا شمار دنیا کی طاقتور ترین افواج میں ہوتا ہے اور چین دنیا میں دفاع پر خرچ کرنے والا دوسرا بڑا ملک ہے، جو تیزی سے اپنی فوج ’پیپلز لبریشن آرمی‘ کو جدید بنانے کی کوشش کر رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں