site
stats
پاکستان

پارلیمانی نظام میں وزیراعظم کی جگہ کوئی نہیں لے سکتا،چوہدری نثار

کلرسیداں: بلاول بھٹو بچے نہیں رہے ہیں مگر سیاست سے نابلد ضرور ہیں،وزیراعظم کی غیرموجودگی میں نائب وزیر اعظم کی آئین میں گنجائش نہیں۔

تفصیلات کے مطابقوفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار اپنے انتخابی حلقے میں ترقیاتی اسکیموں کے سلسلے میں کلر سیداں آئے تھے،اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ اپنے حلقے میں سرکاری اسکول سمیت کئی زمینوں پر قبضے واگذار کروالیے ہیں جب کہ آج اپنے حلقے میں 4 ارب سے زائد کے ترقیاتی منصوبوں کا آغاز کروں گا۔

اپنے حوالے سے بلاول بھٹوکے دیے گئے بیان پر چوہدری نثار نے کوئی ردعمل دینے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ بلاول بھٹو بچے نہیں ہیں لیکن سیاست سے نابلد ہیں،غیر ضروری اور غیر سنجیدہ بیانات پر تبصرہ کرنا مناسب نہیں سمجھتا۔

وزیر اعظم کی غیر موجودگی سے آئینی خلاء کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں وزیر داخلہ چوہدری نثار نے جواب دیا کہ پارلیمانی نظام میں وزیر اعظم کی جگہ کوئی اور نہیں سکتا،دنیا بھر کے جمہوری ممالک میں وزیر اعظم کی بیماری یا ملک سے باہر ہونے کی صورت میں کوئی اور وزیر اعظم کی جگہ نہیں لیتا، برطانیہ،ہندوستان،آسٹریلیا،اور کینیڈا سمیت کہیں ایسی مثل نہیں ملتی۔

وزیراعظم اس سے قبل بھی کئی مرتبہ بیرون ملک دوروں پر جا چکے ہیں، کبھی ان کی غیر موجودگی پر آئینی بحران پیدا نہیں ہوا،اب ایسا کیا ہو گیا کہ یہ سولاات اُٹھائے جا رہے ہیں،انہوں نے وضاحت پیش کی کہ وزیر اعظم کی غیر موجودگی،بیماری یا چھٹی میں وفاقی کابینہ اپنا کام کرتی رہتی ہے۔

دہشت گردی کے حوالے سے امریکی رہورٹ پر چوہدری نثار نے موقف اپنایا کہ 2013 کے مقابلے میں دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی ہوئی ہے،اس حوالے سے امریکہ کی رپورٹ کو سنجیدگی سے نہیں لینا چاہیے۔


اسلام آباد سےجعلی شناختی کارڈ بنانے والے 7 ملزمان گرفتار


نادار افسران کی گرفتاری اور جعلی شناختی کارڈز بنانے کے حوالے سے اُن کا کہنا تھا کہ نادرا کا پورا ادارہ بدعنوان نہیں، تاہم کچھ کرپٹ لوگ ضرور ہیں،جن کا پتہ لگا کے گرفتار کیا جارہا ہے۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ نادرا نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اہم کردار ادا گیا ہے،ہماری حکومت نے گزشتہ دوسال میں لاکھوں شناختی کارڈز منسوخ کیے ہیں۔


چوہدری نثار نے شناختی کارڈز کی تصدیق کےنظام کی منظوری دیدی


شناختی کارڈز کی تصدیقی عمل کے لیے وضع کیے گئے نظام کے حوالے سے وضاحت دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ پہلے مرحلے میں ڈھائی کروڑخاندانوں کی تصدیق کی جائیگی،اس سلسلے میں ہر شخص کو نادرا آفس آنے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔

انہوں نے کہا کہ نادرا کی جانب سے ساڑھے 10کروڑسمزمالکان کوخاندان کے سربراہ کو تصحیح کےلیے پیغام بھیجا جائے گا،کسی خاندان میں غیر متعلقہ اشخاص موجود ہوئے تو نادرا جا کر انہیں حذف کرانا ہوگا، یا وہ افراد جن کا شناختی کارڈ منسوخ کیاجاے گا،انہیں مقامی نادراسینٹرآنا پڑے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top