The news is by your side.

Advertisement

چھوٹو گینگ نے فوج کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے، 24 یرغمالی پولیس اہلکاررہا

راجن پور : چھوٹوگینگ نے پاک فوج کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے۔ چوبیس یرغمالی پولیس اہلکار وں کو بھی رہا کردیا گیا، جبکہ پاک فوج نے غلام رسول عرف چھوٹو کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سیکیورٹی فورسز کو آپریشن آہن میں بڑی کامیابی مل گئی، چھوٹوگینگ نے گھٹنے ٹیک دیئے۔ذرائع کے مطابق راجن پور کےعلاقے کچہ جمال میں چھوٹوگینگ نے گزشتہ شام فائربندی کردی تھی۔ جس کے بعد رات گئے ڈاکوؤں نے فوج کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے اور چوبیس یرغمالی پولیس اہلکاروں کوبھی رہا کردیا گیا۔

ہتھیار ڈالنے کے بعد ڈاکوؤں کو حراست میں لے کر پاک فوج کے بیس کیمپ سون میانی منتقل کردیا گیا ہے، جہاں بڑی تعداد میں ہتھکڑیاں اور قیدیوں کی گاڑیاں منگوالی گئی ہیں جبکہ نقل مکانی کرنے والوں کی واپسی بھی شروع ہوگئی ہے۔

ڈاکو تاحال فوج کی حراست میں ہیں جنہیں پاک فوج اور پولیس حکام کے درمیان مذاکرات کے بعد پنجاب پولیس کے حوالے کردیا جائے گا۔ جبکہ پاک فوج نے غلام رسول عرف چھوٹو کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

چھوٹو گینگ کے ہتھیار ڈالنے کے بعد بند کی گئی نہروں میں پانی چھوڑدیا گیا ہے، تاہم عسکری ذرائع نے تاحال تصدیق نہیں کی ہے اس سے پہلے چھوٹو گینگ نے صرف پاک فوج کے سامنے ہتھیار ڈالنے کا اعلان کیا تھا۔

پاک فوج نے اب بھی علاقے کوگھیرے میں لے رکھا ہے۔ چھوٹو گینگ کے خلاف پنجاب پولیس کا آپریشن تین ہفتے سے جاری تھا جس میں پولیس کے چھ اہلکار جاں بحق ہوئے جس کے بعد آپریشن میں پاک فوج کی مدد لی گئی تھی۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں