site
stats
سندھ

نثار کے ہوتے ہوئے دہشت گردی کا خاتمہ ممکن نہیں، سعید غنی

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی کا کہنا ہے کہ چوہدری نثار کی موجودگی میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابی حاصل نہیں ہوسکتی، کمیشن کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد وفاقی وزیرداخلہ کو اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دینا چاہیے۔

یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کی پریس کانفرنس کے جواب میں کہی. انہوں نے کہا کہ چوہدری نثار کی کارکردگی سے پہلے ہی مطمئن نہیں تھے اب تو سپریم کورٹ کی رپورٹ نے بھی ہمارے خدشات کو تقویت دے دی.


اسی سے متعلق : کمیشن کی رپورٹ کو ہر فورم پر چیلنج کروں گا، چوہدری نثار


انہوں نے کہا کہ ثابت ہو چکا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہیں ہو پارہا ہے جس کے بعد وزیر داخلہ چوہدری نثار کو استعفیٰ دے دینا چاہیے اور ان کی جگہ کوئی نیا وزیرداخلہ آنا چاہیے جو دلیری کے ساتھ دہشت گردوں کے ساتھ نمٹ سکے کیوں کہ موجودہ وفاقی وزیر داخلہ کی موجودگی میں دہشت گردی کے خلاف جنگ جیتنا ممکن نہیں۔

سعید غنی کا کہنا تھا کہ ہمیں معلوم ہے کہ چوہدری نثار کالعدم تنظیموں کو تحفظ دینے کے لیے وزارت نہیں چھوڑیں گے، ریکارڈ گواہ ہے چوہدری نثار دہشت گردوں کے انجام پر روتے رہے اس لیے وفاقی وزیر داخلہ میں اتنی اخلاقی جرأت نہیں ہے کہ مستعفیٰ ہوں حالانکہ انہوں نے اپنے منصب سے انحراف کیا ہے، جھوٹ پر جھوٹ بولنا مسلم لیگ ن کی شناخت بن چکی ہے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے حکم پر سانحہ سول اسپتال کوئٹہ کی تحقیقات کے لیے تشکیل دیئے گئے کمیشن نے دو روز اپنی رپورٹ جاری کی تھی جس میں وزارتِ داخلہ اور وزیر داخلہ کی کارکردگی پر برہمی کا اظہار کیا گیا تھا۔

رپورٹ کے منظر عام پر آنے کے بعد آج وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی نے ایک پریس کانفرنس کے ذریعے رپورٹ پر وضاحت اور سیاسی ناقدین کی جانب سے لگائے گئے تمام الزامات کی تردید کرتے ہوئے اپنا موقف پیش کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top