The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم استعفیٰ دے دیں گے، چوہدری شجاعت کی پیش گوئی

لاہور: مسلم لیگ (قائد اعظم) کے سربراہ چوہدری شجاعت نے امیر جماعت اسلامی سے ملاقات کے دوران پیش گوئی کی ہے کہ وزیراعظم استعفیٰ دے دیں گے۔

وہ چوہدری پرویز الہی کے ہمراہ امیر جماعت اسلامی سراج الحق سے ملاقات کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کو باہمی اختلافات بھلانے دینے چاہئیں اور ایک پلیٹ فارم سے کرپشن کے خلاف جدو جہد کرنا چاہیے یہی پیغام لے کر چار جماعتی اتحاد کی جانب سے یہاں آیا ہوں۔

چوہدری شجاعت نے کہا کہ پاناما کیس کا فیصلہ تاریخی ہے جس کے تحت وزیراعظم صادق اور امن نہیں رہے ہیں اور حق حکمرانی کھو بیٹھے ہیں اور میں آج پیش گوئی کرتا ہوں کہ وزیراعظم استعفیٰ دے دیں گے۔


*وزیراعظم ملزم ہیں مستعفی ہوں تاکہ جے آئی ٹی آزادانہ تحقیقات کر سکے، گرینڈ الائنس


اس موقع پر امیر جماعت اسلامی نے چوہدری شجاعت کے موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا ہے کہ سپریم کورٹ نے وزیراعظم کے بیانات کو سچ تسلیم نہیں کیا اس لیے نوازشریف کو اخلاقی طور پر اس منصب سے علیحدہ ہوجانا چاہئے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ کرپشن مسائل کی ماں ہے اور بد قسمتی سے ملک کے حکمران کرپشن میں ملوث ہیں جو کہ پاناما لیکس منظرعام پر آنے پر روز روشن کی طرح عیاں ہو گئی ہے جس کے بعد عدالت میں کیس چلا تو سپریم کورٹ نے ایک لحاظ سے وزیراعظم کو ملزم ڈکلیئر کیا۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم سے تفتیش کے لیے جےآئی ٹی بنانا پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فیصلہ ہے تاہم جےآئی ٹی کی کارروائی کو شفاف اور پبلک کیاجائے تاکہ حقائق عوام کے سامنے آ سکیں کیوں کہ ملک کا نظام اور کرپشن ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے۔

سراج الحق نے کرپشن کے خلاف ہائیکورٹ بار کےعزم کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے چوہدری شجاعت کی سربراہی میں قائم ہونے والی کے چار جماعتی اتحاد کو سراہا جس میں مسلم لیگ (ق)، پاکستان عوامی تحریک، متحدہ دینی محاذ اور سنی اتحاد کونسل شامل ہیں۔

اس موقع پر چوہدری شجاعت نے امیر جماعت اسلامی کو چا جماعتی اتحاد کے ساتھ مل کر وزیراعظم کے استعفی سے متعلق تحریک چلانے کی دعوت دی جب کہ چوہدری پرویز الہی کا کہنا تھا کہ چار جماعتی اتحاد کا وفد بھی کل جماعت اسلامی کی قیادت سے ملے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں