The news is by your side.

Advertisement

آسٹریلوی پولیس کا کرائسٹ چرچ واقعے میں ملوث‌ دہشت گرد کے گھر پر چھاپہ

سڈنی : آسٹریلین پولیس نے کرائسٹ چرچ میں مساجد پر حملے کی تفتیش کے سلسلے میں دہشت گرد سے منسلک افراد کے گھروں پر چھاپہ مار کر سرچ آپریشن کیا۔

تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا کی ریاست میں پولیس نے چھاپہ مار کارروائی کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں مساجد پر حملہ کرنے والے 28 سالہ دہشت گرد کے عزیز و اقارب کے گھروں کی تلاشی لی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ پولیس نی نیو ساؤتھ ویلز کے علاقے سینڈی بیچ اور لارنس میں دو گھروں پر چھاپہ مار کارروائی کی، ایک گھر برینٹن ٹیرینٹ کے ہمشیرہ کا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مذکورہ گھروں پر سرچ آپریشن کا مقصد ایسی شواہد اکھٹے کرنا تھا جو نیوزی لینڈ پولیس کو کرائسٹ چرچ واقعے کی تحقیقات میں معاونت فراہم کرسکیں۔

مزید پڑھیں : نیوزی لینڈ میں اسلحہ قوانین تبدیل کیے جائیں گے‘ وزیراعظم جیسنڈا ایرڈن

خیال رہے کہ دو روز قبل جیسنڈا ایرڈن نے کہا تھا کہ مرکزی ملزم سیکیورٹی اداروں کی واچ لسٹ پرموجود نہیں تھا، نیوزی لینڈ میں اسلحہ قوانین تبدیل کیے جائیں گے۔

مزید پڑھیں : نیوزی لینڈ کی 2 مساجد میں فائرنگ‘ 49 افراد جاں بحق

یاد رہے کہ گزشتہ روز نیوزی لینڈ کی دو مساجد میں دہشت گرد حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں خواتین وبچوں سمیت 49 افراد جاں بحق اور 20 زخمی ہوئے تھے۔

مرکزی حملہ آور کی شناخت 28 سالہ برینٹن ٹیرنٹ کے نام سے ہوئی ہے اور وہ آسٹریلوی شہری ہے جس کی تصدیق آسٹریلوی حکومت نے کردی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ برینٹن ٹیرینٹ کو ایک روز قبل عدالت میں پیش کردیا گیا تھا جہاں اس پر قتل کے جرم میں فرد جرم عائد کی گئی تھی تاہم ابھی ٹیرنٹ پر دہشت گردی یا دوسری دفعات نہیں لگائی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں