The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: مریض کے چہرے پر خوشیاں لوٹ آئیں

پیرس: فرانس میں لاک ڈاؤن کے باعث ایک دوسرے سے جدا ہونے والے جوڑے کے درمیان پہلی ملاقات نے دونوں کے چہروں پر خوشیاں بکھیر دیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر کی طرح فرانس میں بھی کرونا معمر شہریوں کے لیے جان لیوا ثابت ہوا ہے اسی کے پیش نظر حکومت نے ضعیف شہریوں کی آپس میں ملاقات پر بھی مکمل پابندی عائد کررکھی ہے۔

رپورٹ کے مطابق ’جوزف‘ نامی شہری کرونا نہیں بلکہ کسی اور مہلک مرض میں مبتلا ہے لیکن پابندی کے باعث وہ نرسنگ ہوم میں کسی سے ملاقات نہ کرنے کے پابندی تھے لیکن کیئر سینٹر نے ملاقات کا بہترین موقع فراہم کردیا۔

کرونا سمیت دیگر جراثیم اور بیماریوں سے بچنے کے لیے نرسنگ کیئر سینٹر نے ’ببل ٹینٹ‘ تیار کیا ہے جہاں جوڑا حفاظتی حصار میں رہتے ہوئے ایک دوسرے سے مل سکتا ہے، اسی ٹینٹ نے ہفتوں سے بچھڑے جوڑے کو بھی ملا دیا۔

روزانہ کی بنیاد پر تقریباً 7 سے 8 ملاقاتیں ہوتی ہیں اور ہر ملاقاتیوں کو 45 منٹ کا وقت دیا جاتا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کیئر سینٹر میں زیر علاج کئی ایسے مریض ہیں جن کے اپنے بھی ان سے ملاقات کے خواہاں ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں