The news is by your side.

Advertisement

خواجہ سراؤں کے خلاف مقدمہ درج کرنے والے شہری کو ہراساں کیا جانے لگا

کراچی: خواجہ سراؤں کے خلاف مقدمہ درج کرنے والے شہری کو ہراساں کیا جانے لگا ہے، شہری کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز عدالتی کارروائی کے بعد خواجہ سرا میرے فلیٹ کے باہر جمع ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق خواجہ سراؤں نے قیصر مسعود ملک کو ہراساں کرنا شروع کر دیا ہے جس نے ان کے خلاف مقدمہ درج کروایا، قیصر کا کہنا ہے کہ خواجہ سراؤں نے گھر کے باہر جمع ہو کر مجھے اور میرے گھر والوں کو ہراساں کرنے کی کوشش کی۔

شہری نے کہا خواجہ سرا 26 اسٹریٹ کے اطراف منشیات فروشی اور فحاشی پھیلا رہے تھے، ان کے خلاف منشیات فروشی اور فحاشی پھیلانے پر مقدمہ درج کرایا تھا۔

شہری کا یہ بھی کہنا ہے کہ چند دن قبل بھی خواجہ سراؤں کی ٹولی نے گھر پر حملہ کیا تھا اور توڑ پھوڑکی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  غیراخلاقی سرگرمیوں میں ملوث خواجہ سراؤں کی گرفتاری، ساتھیوں کا تھانے پرحملہ

واضح رہے کہ دو دن قبل کراچی کے علاقے ڈیفنس اور بدر کمرشل میں درخشاں پولیس نے شہریوں کی شکایت پر خواجہ سراؤں کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے 13 کو گرفتار کر کے تھانہ منتقل کیا تھا، جس پر ان کے ساتھی خواجہ سراؤں نے درخشاں تھانے پرحملہ بھی کیا۔

مقامی عدالت نے گزشتہ روز سماعت کے دوران خواجہ سراؤں کو رہا کرنے کا حکم جاری کر دیا تھا۔

سٹی کورٹ میں خواجہ سراؤں کی گرفتاری سے متعلق کیس کی پیشی پر درخشاں پولیس خواجہ سراؤں کو عدالت میں پیش نہ کر سکی تھی، جب کہ خواجہ سراؤں کے ساتھی بڑی تعداد میں عدالت پہنچ گئے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے ساتھیوں کو کیوں پیش نہیں کیا جا رہا، جب ہم معلومات لینے تھانے جاتے ہیں تو کہا جاتا ہے انتظار کریں، ہم منشیات فروش نہیں، انصاف فراہم کیا جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں