The news is by your side.

Advertisement

انسانی خون سے پیاس بجھانے والا چیتا سوات کے شہریوں کے سامنے بے بس

سوات: انسانی خون منہ کو لگنے کے بعد پیاس بجھانے کے لیے گاؤں میں گھسنے والے چیتے کو شہریوں نے مار ڈالا۔

تفصیلات کے مطابق سوات کے علاقے سربانڈہ مٹہ میں چیتے نے گاؤں پر حملہ کر دیا، حملے سے ایک شخص زخمی ہو گیا جسے اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ مقامی لوگوں نے چیتے کو فائر کر کے ہلاک کر دیا۔

چیتے کو مارنے کے الزام میں تھانہ مٹہ میں 4 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے، جب کہ گزشتہ روز مارے گئے چیتے کو محکمہ وائلڈ لائف نے مینگورہ منتقل کر دیا، مینگورہ میں لائیو اسٹاک اسپتال میں چیتے کا پوسٹ مارٹم کیا جا رہا ہے۔

واقعے کے بعد چیتے کو مارنے کی مخالفت کرنے والوں کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ کے پی کے حلقے میں لوگوں نے نایاب چیتے کو گولی ماری۔

دوسری طرف لوگوں کا کہنا ہے کہ چیتے نے قریبی جنگل میں کئی جانوروں کو کھایا تھا، آبادی میں آنے کے بعد کئی لوگوں کو بھی زخمی کیا، پولیس کے مطابق حملے کے نتیجے میں تین افراد زخمی ہو چکے ہیں، یہ بھی اطلاعات ہیں کہ چیتے دو تھے، مقامی لوگوں نے فائرنگ کر کے ایک کو مار دیا جب کہ دوسرا چیتا اپر دیر کے نہاگ درہ جنگل کی طرف بھاگ گیا۔

خیال رہے کہ سنو لیپرڈ دنیا بھر میں ایک نایاب جانور ہے، اسنو لیپرڈ ٹرسٹ کے مطابق پاکستان میں یہ برفانی چیتا پختون خوا، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے صرف ہندوکش اور قراقرم کے پہاڑی سلسلوں میں پایا جاتا ہے، اور اندازاً اس کی آبادی 200 سے ڈھائی سو کے درمیان ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں