The news is by your side.

Advertisement

مریخ پر ڈھائی لاکھ انسانوں کا شہر، تعمیراتی کام کب شروع ہوگا؟

میڈرڈ: ایک ہسپانوی تعمیراتی کمپنی نے سرخ سیارے پر ڈھائی لاکھ انسانوں کے لیے شہر بسانے کا منصوبہ پیش کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق مریخ پر پہلا شہر بسانے کی تیاری شروع کر دی گئی، ہسپانوی کمپنی ابیبو اسٹوڈیو نے نووا شہر کا منصوبہ متعارف کرایا ہے جو مریخ ہی پر موجود خام مال سے تعمیر کیا جائے گا۔

ڈھائی لاکھ شہریوں کو سرخ سیارے پر بسانے کے لیے گھروں کو پہاڑ کے پہلو میں افقی کی بجائے عمودی طور پر ڈیزائن کیا گیا ہے، شہر کا یہ ڈیزائن ماحولیاتی دباؤ اور تابکاری کے اثر کو کم کرے گا۔

تعمیراتی کمپنی مریخ پر پائی جانے والی کاربن ڈائی آکسائیڈ، پانی اور قدرتی وسائل سے گھروں کو تعمیر کرنے میں مدد لے گی۔

مریخ پر تعمیر اس شہر میں گھر، دفاتر اور سبزہ زار وغیرہ سبھی ایسے مقامات ہوں گے جو زمین پر ہوتے ہیں، تاہم یہ تحقیق ابھی نہیں ہو سکی ہے کہ انسان کو وہاں کس قسم کے حالات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

اس شہر میں سبز رنگ کے گنبد تعمیر کیے جائیں گے، جنھیں سبزیاں اگانے کے لیے تجربات اور سیر تفریح کے لیے استعمال کیا جائے گا، خوراک کا بنیادی ذریعہ فصلیں اگانا ہوگا۔

زمین سے مریخ کے لیے شٹل سروس ہر 26 ماہ بعد چلے گی، جو 3 ماہ تک اپنا سفر جاری رکھے گی، اور مریخ پر جانے کے لیے یک طرفہ ٹکٹ 3 لاکھ ڈالر ہو سکتا ہے۔

تاہم 2054 تک مریخ پر تعمیراتی کام شروع ہونے کا امکان نہیں ہے اور وہاں آباد کاری 2100 سے پہلے ممکن نہیں ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں