The news is by your side.

پاکستان میں انصاف کا ایک ہی نظام رائج ہے، چیف جسٹس

لندن: چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ وہ بیٹے کی گریجویشن کی تقریب میں شرکت کے لیے لندن آئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں نے محبت کا اظہار کر کے فنڈ ریزنگ تقریب کا اہتمام کیا ہے۔

پاکستان اور دیگر ملکوں میں ڈیم کی تعمیر کے سلسلے میں ایک بڑی مہم بن چکی ہے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ کچھ حلقے اپنے اپنے انداز سے سوچ رہے ہوتے ہیں، لیکن پاکستان میں سلیکٹڈ سسٹم نہیں بلکہ انصاف کا ایک ہی نظام ہے۔

میاں ثاقب نثار نے کہا کہ پاکستان اور دیگر ملکوں میں ڈیم کی تعمیر کے سلسلے میں ایک بڑی مہم بن چکی ہے، جو کہ پاکستان میں ڈیم بننے تک جاری رہے گی۔

خیال رہے کہ چیف جسٹس پاکستان آج پی آئی اے کی پرواز 757 سے لندن پہنچے ہیں، جہاں وہ سات دن گزاریں گے اور 27 نومبر کو وطن واپس آئیں گے۔


یہ بھی پڑھیں:  چیف جسٹس ثاقب نثار لندن روانہ، جسٹس گلزار قائم مقام چیف جسٹس مقرر


ان کی جگہ جسٹس گلزار احمد 28 نومبر تک چیف جسٹس کے عہدے پر فرائض انجام دیں گے، جسٹس عظمت سعید نے جسٹس گلزار سے عہدے کا حلف لیا۔

ڈیم فنڈ میں اب تک کئی ممالک میں مقیم پاکستانیوں نے خطیر رقمیں جمع کی ہیں، دو ہفتے قبل ناروے میں محض دو گھنٹے میں 8 کروڑ روپے جمع کیے گئے، اس سے قبل سعودی عرب میں بھی 6 کروڑ 20 لاکھ روپے جمع کیے گئے۔ اسی طرح پیرس میں بھی دو لاکھ یورو جمع کیے جا چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں