The news is by your side.

Advertisement

اویس شاہ کو فوری بازیاب کرایا جائے، چیف جسٹس پاکستان اداروں پر برہم

کراچی: چیف جسٹس سپریم کورٹ انور ظہیر جمالی اویس شاہ کے بازیاب نہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے اداروں پر برہم ہوگئے اور بازیابی کے اقدامات پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ انہیں فوری بازیاب کرایا جائے۔

چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان کی زیر صدارت سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں چیف جسٹس نے سندھ میں امن و امان کی صورتحال اور اویس شاہ کے اغوا کے معاملے پر بات چیت کی۔

انہوں نے سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر ناخوشی اور عدم اطمینان کا اظہار کیا اور چیف سیکریٹری سندھ کو صوبے میں امن کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لانے کی ہدایت دی اور کہا کہ  سیکیورٹی ادارے اویس شاہ کو فوری بازیاب کرائیں۔

انہوں نے چیف جسٹس کے اغوا کا نوٹس لیتے ہوئے ان کی فوری بازیابی کا حکم جاری کردیا اور کہا کہ واقعے سے ججز اور ان کے اہل خانہ میں عدم تحفظ کا احساس پیدا ہوا اور اغوا سے عوام کو بھی غلط پیغام گیا،اویس شاہ کی فوری بازیابی ضروری ہے ۔

دریں اثنا  ڈی جی رینجرز نے بھی چیف جسٹس کو اویس شاہ کی بازیابی سے متعلق پیش رفت سے آگاہ کیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈی جی رینجرز نے کراچی میںامن و امان کی صورت حال پر بھی بریف کیا۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کے بیٹے کو کلفٹن سے نامعلوم افراد اغوا کرکے لے گئے، تمام  سیکیورٹی ادارے انہیں تلاش کررہے ہیں، جے آئی ٹی بھی تشکیل دی جاچکی تاہم ابھی تک ان کی بازیابی تو درکنار ان کے اغوا سے متعلق کوئی سراغ تک نہ لگایا جاسکا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں