چیف جسٹس ثاقب نثار نے گھریلو ملازمہ پر تشدد کا نوٹس لے لیا -
The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس ثاقب نثار نے گھریلو ملازمہ پر تشدد کا نوٹس لے لیا

اسلام آباد : چیف جسٹس ثاقب نثار نے گھریلو ملازمہ پر تشدد کا نوٹس لے لیا اور رجسٹرار اسلام آباد ہائیکورٹ سے چوبیس گھنٹوں میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں ایڈیشنل سیشن جج کا کمسن ملازمہ تشدد اورپھر صلح کی خبروں کا چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ازخود نوٹس لے لیا اور اسلا م آباد ہائی کورٹ کے رجسٹرار کو ہدایت کی کہ 24گھنٹے کے اندر تمام واقعے کی تفصیلی رپورٹ سپریم کورٹ میں داخل کی جائے ۔

چیف جسٹس نے اسلام آباد ہائیکورٹ کو حکم دیا کہ تحقیقات کریں کہ حاضری سروس جج نے دس سالہ طیبہ پر تشدد کیا گیا یا نہیں۔


مزید پڑھیں : کمسن ملازمہ پر تشدد کا معاملہ: بچی کے والدین نے راضی نامہ کرلیا


یاد رہے کہ گذشتہ روز واقعہ کا ڈراپ سین اس وقت ہوا، جب طیبہ کے والدین نے مقدمہ میں جج کو فی سبیل اللہ معاف کر دیا۔ والد نے تحریری بیان میں یہ بھی لکھا ہے کہ جج کو بری کرنے یا ضمانت دینے پر مجھے کوئی اعتراض نہیں۔

واضح رہے کہ اسلام آباد میں سیشن جج کے گھر کام کرنے والی 10 سالہ گھریلو ملازمہ طیبہ کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا، متاثرہ بچی طیبہ نے الزام عائد کیا ہے کہ وہ گزشتہ 2 سال سے اپنے مالکان کے تشدد کا نشانہ بن رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں