بلوچستان میں 20 افراد کا قتل، چیف جسٹس کا ازخود نوٹس -
The news is by your side.

Advertisement

بلوچستان میں 20 افراد کا قتل، چیف جسٹس کا ازخود نوٹس

اسلام آباد: صوبہ بلوچستان میں گزشتہ چند روز میں ہونے والے 20 افراد کے قتل کا چیف جسٹس پاکستان نے از خود نوٹس لے لیا۔ چیف جسٹس نے ڈی جی ایف آئی اے اور آئی جی بلوچستان سے 3 دن میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے صوبہ بلوچستان میں گزشتہ چند روز میں ہونے والے 20 افراد کے قتل کا از خود نوٹس لے لیا۔

چیف جسٹس نے پوچھا کہ متعلقہ ادارے ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے کیا کر رہے ہیں۔ متعلقہ ادارے اقدامات سے متعلق آگاہ کریں۔

مزید پڑھیں: تربت سے 15 گولیوں سے چھلنی لاشیں برآمد

سپریم کورٹ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق 20 افراد کو گولیاں مار کر قتل کیا گیا۔ ان افراد کو غیر قانونی طریقے سے سرحد پار کروا کر ایران منتقل کیا جانا تھا۔ مقتولین کو پنجاب کے علاقوں سے انسانی اسمگلنگ کے لیے بلوچستان لے جایا گیا۔

چیف جسٹس نے ڈی جی ایف آئی اے، آئی جی بلوچستان سے 3 دن میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

یاد رہے کہ 15 نومبر کو بلوچستان کے ضلع کیچ کے شہر تربت کے علاقے گروک سے 15 گولیوں سے چھلنی لاشیں ملی تھیں۔ مقتولین کا تعلق پنجاب کے مختلف شہروں سے تھا۔

اس کے بعد گزشتہ روز تربت ہی کے علاقے تجابان سے مزید 5 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی۔ ان افراد کو بھی گولیاں مار کر قتل کیا گیا تھا جبکہ ان کا تعلق پنجاب کے شہر گجرات سے تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں