The news is by your side.

Advertisement

ملزم خاموش بھی رہے تو جرم کو نیب نے ثابت کرنا ہے ، چیف جسٹس

اسلام آباد : چیف جسٹس آصف کھوسہ نے ایک کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے نیب کو گائیڈ لائن دے دی اور کہا ملزم خاموش بھی رہےتو جرم کو نیب نے ثابت کرناہے، شک وشبہ سے بالاتر کیس کو ثابت کرنا نیب کا کام ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوربرد میں ملوث ملازمین کی اپیلوں پر سماعت کی۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ ملزم خاموش بھی رہے تو جرم کو نیب نے ثابت کرنا ہے۔

چیف جسٹس کا ریمارکس میں کہنا تھا گندم خوردبرد میں ملوث ٹھیکیداروں نے پلی بارگین کرلی، حکومت کا نقصان پلی بارگین سے ریکور ہو گیا۔

جسٹس طارق مسعود نے کہاکہ گندم کے ٹرک راستے میں غائیب ہوئے، دو ملازمین نے ٹرک غائب ہونے کی اطلاع دی دو نے نہیں دی۔

چیف جسٹس نے کہاکہ محکمہ فوڈز ملازمین نے کام میں غفلت کی تو محکمانہ کاروائی ہو گی، ادارہ کی غفلت پر نیب قانون کا اطلاق کیسے ہو سکتا ہے،شک و شبہ سے بالاتر کیس کو ثابت کرنا نیب کا کام ہے۔

اعلی عدالت نے محکمہ خوراک بلوچستان میں گندم خورد بردکیس کے ملزمان کی سزا کوکالعدم قراردے دیا۔

یاد رہے کہ اکبر، پرویز بیگ، رشید احمد اور محمد حسین پر گندم اسٹاک میں خوردبرد کا الزام تھا ،احتساب عدالت نے ملزمان کو سزا سنائی تھی اور ہائی کورٹ نے بھی سزا کو برقرار رکھا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں